علی صالح کے حامیوں کی ہلاکتوں سے حوثی ملیشیا کی اصلیت طشت ازبام

علی صالح کے حامیوں کی ہلاکتوں سے حوثی ملیشیا کی اصلیت طشت ازبام

  



ابوظہبی(این این آئی)متحدہ عرب امارات کے وزیر مملکت برائے امور خارجہ انور قرقاش نے کہا ہے کہ یمن کے مقتول سابق صدر علی عبداللہ صالح کی جماعت جنرل پیپلز کانگریس کے لیڈروں اور وبستگان کے حالیہ قتلِ عام سے حوثیوں کی اصلیت طشت از بام عام ہوگئی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ایک ٹوئیٹ میں انھوں نے کہا کہ حوثی ملیشیا نے دارالحکومت صنعا ء میں ریاستی اداروں اور ان کے وسائل پر قبضہ کررکھا ہے اور وہ ان کے فنڈز کو اینٹھ کر اپنے مذموم مقاصد کے لیے استعمال کررہے ہیں۔بیان کے مطابق حوثیوں نے صنعاء میں ریاست کی آمدن کے ذرائع پر قبضہ جما رکھا ہے۔ یہ رقم ساڑھے تین ارب ڈالرز سے پانچ ارب ڈالرز تک سالانہ بنتی ہے اور یہ رقم حوثی ملیشیا کے حامیوں اور دہشت گردوں میں تقسیم کی جارہی ہے۔

مزید : عالمی منظر


loading...