دینی جماعتیں عام انتخابات میں مجلس کے پلیٹ فارم سے حصہ لیں گی : غفور حیدری

دینی جماعتیں عام انتخابات میں مجلس کے پلیٹ فارم سے حصہ لیں گی : غفور حیدری

  



اسلام آباد (صباح نیوز)متحدہ مجلس عمل کا بحالی کے بعد تیسرا سربراہی اجلاس 18جنوری 2018کو پنجاب کے دارلحکومت لاہور میں ہوگا اہم فیصلے کیے جائیں گے مرکزی قیادت کے ناموں کا اعلان کیا جائے گا ، جمعیت علماء اسلام (ف) کے سیکریٹری جنرل و ڈپٹی چیئرمین سینیٹ مولانا عبدالغفور حیدری نے واضح کیا ہے کہ اتحاد کو تقویت دینے کے لیے دینی جماعتوں کاحکومتوں کو چھوڑنا کوئی بڑا مسئلہ نہیں ہے ایک ماہ میں اس حوالے سے کوئی فیصلہ ہو جائے گا ۔ 2018 کے انتخابات میں ایم ایم اے کے پلیٹ فارم سے کتاب کے انتخابی نشان پر حصہ لیا جائے گا۔ سال نوکے آغاز سے بھر پور عوامی رابطہ مہم شروع کردی جائے گی ۔ یاد رہے کہ اتحاد میں شامل تین جماعتیں وفاقی و صوبائی حکومتوں میں شامل ہیں ۔ آئندہ اجلاس کے میزبان پروفیسر ساجد میر ہوں گے سٹیئرنگ کمیٹی نے مرکزی عہدوں اور منشور کے حوالے سے کام شروع کر دیا ہے متحدہ مجلس عمل کا مکمل طور پر احیا ہو چکا ہے ۔ آئندہ سربراہی اجلاس میں مولانا فضل الرحمن ، سراج الحق ، پیر اعجاز ہاشمی، پرو فیسر سینیٹر ساجد میر، علامہ ساجد نقوی، شاہ اویس نورانی اور اسٹیئرنگ کمیٹی کے رکان شریک ہونگے ۔مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ اسٹیئرنگ کمیٹی ایک ماہ میں مرکزی تنظیم سازی کی بارے میں تجاویز کو حتمی شکل دے گئی اور عہدیداروں کا اعلان کردیا جائے گا ، جو جماعتیں مختلف اتحادی حکومتوں میں شامل ہیں ان کی حکومتوں میں موجودگی اور علیحدگی کے معاملات پر بھی سفارشات طے کی جائیں گی۔ مقبوضہ بیت المقدس کے خلاف امریکی اعلان ، پاکستان کے اسلامی تشخص کے تحفظ فرقہ وارانہ ہم آہنگی دیگر مسائل پر دینی جماعتیں نئے عزم سے مشترکہ جدوجہد کریں گی ۔

غفور حیدری

مزید : علاقائی


loading...