سی پیک کے مغربی روٹ کے پیکج ون کا 60 فیصد کام مکمل

سی پیک کے مغربی روٹ کے پیکج ون کا 60 فیصد کام مکمل

  



ملتان(جنرل رپورٹر)این ایل سی نے پاک چین اقتصادی راہداری کے مغربی روٹ کے پیکج ون کا 60فیصد کام مکمل کر لیا۔نیشنل لاجسٹکس سیل (این ایل سی ) پاک چین اقتصادی راہداری(بقیہ نمبر16صفحہ12پر )

کے مغربی روٹ کے انتہائی اہم حصے پر تیزی سے کام کر رہا ہے ‘ اور ابھی تک اس منصوبے کا 60فیصد کام مکمل کر لیا گیا ہے ‘ قومی اہمیت کے اس اہم منصوبے کی تکمیل کیلئے این ایل سی انتہائی ماہر انجینئرز اور تعمیراتی عملے کے ساتھ ساتھ جدید ترین مشینری کا استعمال بھی کر رہا ہے ‘ تاکہ منصوبے کی معیاری اور بروقت تکمیل کو ممکن بنایا جاسکے براہمہ باہتر تا ڈیرہ اسماعیل خان موٹروے سی پیک مغربی حصہ ہے ‘نیشنل ہائیوے اتھارٹی نے اس موٹروے کا پیکج ون اوپن بڈنگ کے ذریعے این ایل سی کے حوالے کیا ہے جس پر کام کا آغاز یکم ستمبر 2016سے ہوا پیکج ون کی لمبائی ساڈھے 54کلومیٹر ہے جو یارک سے شروع ہو کر رحمانی خیل پر ختم ہوتا ہے جسے 13.25ارب روپے کی لاگت سے تعمیر کیا جارہا ہے توقع کی جاری ہے کہ یہ منصوبہ 30اگست 2018تک مکمل کر لیا جائیگااس منصوبے میں 60کلورٹ ‘ 4پل ‘2انٹر چینج ‘ 22سروس ڈکٹ اور 2ٹال پلازہ شامل ہیں ‘ گزشتہ روز این ایل سی نے مقامی صحافیوں کو منصوبے کا دورہ کرایا این ایل سی کے پراجیکٹ منیجر کرنل کمال نے منصوبے کے مختلف پہلوؤں پر بریفنگ دی اس موقع پر انہوں نے بتایا کہ بین القوامی معیار کو یقینی بناتے ہوئے این ایل سی نے تقریباً 100فیصد ارتھ روک مکمل کر لیا ہے انہوں نے کہا کہ این ایل سی انجینئرز نے 3پل ‘ 4انٹر پاس ‘ 52کلورٹ ‘ کے علاوہ 44کلومیٹر طویل سب گریڈ کو تکمل تک پہنچایا ہے انہوں نے بتایا کہ اسفالٹ کا کام بھی شروع ہو چکا ہے اور تاحال منصوبے کے 20فیصد حصے پر اسفالٹ بچھانے کا کام مکمل ہو چکا ہے یارک سے رحمانی خیل تک کل60فیصد کام مکمل کر لیا گیا ہے کرنل کمال نے بتایا کہ سی پیک پر کام کرنا این ایل سی کیلئے باعث فخر ہے اور منصوبے پر کام قومی خدمت کے جذبے کے تحت جاری ہے این ایل سی کی کوشش ہے کہ معیار پر سمجھوتا کئے بغیر پیکج ون پر کام مقررہ مدت تک تکمل پاسکے انہوں نے این ایچ اے اور دیگر سرکاری اداروں کے تعاون کو بھی سراہا یہ بات قابل ذکر ہے کہ منصوبے کی تکمیل سے نہ صرف اسلام آباد اور ڈیرہ اسماعیل خان کے درمیان فاصلہ میں نہایت کمی واقع ہوگی بلکہ یہ پاک چین اقتصادی راہداری کیلئے اہم روٹ کا کردار ادا کریگا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...