سٹی ٹریفک پولیس ملتان لائسنسنگ برانچ میں کرپشن ‘ آر پی او سے رپورٹ طلب

سٹی ٹریفک پولیس ملتان لائسنسنگ برانچ میں کرپشن ‘ آر پی او سے رپورٹ طلب

  



ملتان(شیخ ارسلان سے)سٹی ٹریفک پولیس ملتان لائسنسنگ برانچ میں کرپشن عروج پر پہنچ گئی،برانچ میں موجود عملہ رشوت لے کر ڈرائیونگ لائسنس بنوانے میں سرگرم۔خفیہ ذرائع سے معاملہ علم میں آنے پر ڈی آئی جی ٹریفک پولیس پنجاب نے معاملے کا نوٹس لیتے ہوئے آر پی او ملتان سے رپورٹ طلب کرلی ،تفصیل کے مطاق سٹی ٹریفک پولیس ملتان ڈرائیونگ لاسنسنگ برانچ میں عملہ کی ملی بھگت سے(بقیہ نمبر40صفحہ12پر )

رشوت لے کر شہریوں کے ڈرائیونگ لائسنس بنوائے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ واضح رہے کہ سابق آر پی او ملتان سلطان اعظم تیموری کی جانب سے ٹریفک پولیس ملتان کو منظم کرنے کے حوالے سے گراں قدر اقدامات کیے گئے،اور اسے ڈیجیٹل لائسنسنگ برانچ میں تبدیل کیا گیا ،اس کے باوجود برانچ میں موجود عملہ جیبیں گرم کرنے میں سرگرم ہے،ذرائع سے معلو م ہوا ہے کہ ڈپٹی انسپکٹر جنرل ٹریفک پولیس پنجاب فاروق مظہر کو خفیہ ذرائع سے مذکورہ معاملے کے بارے معلوم ہوا ۔انہوں نے ریجنل پولیس آفیسر ملتان محمد ادریس احمد سے اس بابت خط لکھ کر جواب طلب کیا ہے ۔اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے سورس رپورٹ بھی بھجوائی ہے جس میں تحریری طور پر آگاہ کیا ہے کہ ہمیں معلوم ہوا ہے کہ سٹی ٹریفک پولیس ملتان کی ڈرائیونگ لائسنس برانچ میں کرپشن عروج پر ہے ڈرائیونگ لائسنس بنوانے کے عوض مختلف ریٹ مقرر کئے ہوئے ہیں ،اور ٹاوٹ مافیا لائسنسنگ برانچ عملہ کے ساتھ مل کر کرپشن میں ملوث ہیں۔جنھوں نے نان کمرشل ڈرائیونگ لائسنس بنانے کے 4000روپے اور کمرشل لائسنس بنانے کے 6000روپے ریٹ مقرر کئے ہوئے ہیں اور صریحاً ایس او پی ڈرائیونگ لائسنس مجاریہ ٹریفک ہیڈکوارٹر پنجاب پر عملدرامد نہیں کیا جارہا۔آر پی او ملتان محمد ادریس احمد نے ایس ایس پی آر آئی بی اور ڈی ایس پی آر آئی بی کو معاملے کی انکوائری کا حکم دیا ہے۔

کرپشن

مزید : ملتان صفحہ آخر