’مسلمانوں کے ہاتھ سے مکہ بھی نکل جائے گا اگر۔۔۔‘طیب اردگان نے تہلکہ خیز اعلان کر دیا، پوری مسلم دنیا کو ہلا کر رکھ دیا

’مسلمانوں کے ہاتھ سے مکہ بھی نکل جائے گا اگر۔۔۔‘طیب اردگان نے تہلکہ خیز ...
’مسلمانوں کے ہاتھ سے مکہ بھی نکل جائے گا اگر۔۔۔‘طیب اردگان نے تہلکہ خیز اعلان کر دیا، پوری مسلم دنیا کو ہلا کر رکھ دیا

  



انقرہ(مانیٹرنگ ڈیسک)اسلام کے دشمن جب بھی مسلمانو ںپر کوئی حملہ کرتے ہیں تو بدقسمتی سے مسلم ممالک کے حکمران لفظی مزاحمت سے بڑھ کر کچھ نہیں کر پاتے۔ حال ہی میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیلی دارلحکومت تسلیم کرنے کا اعلان کیا تو اس پر بھی مسلم ممالک کے سربراہان محض بیانات جاری کرنے تک محدود رہے۔ ایسی صورتحال میں ترکی کے صدر رجب طیب اردگان نے مسلم حکمرانوں کے ضمیر کو جھنجھوڑنے کیلئے ایک ایسی بات کہہ دی ہے کہ جو ہر صاحبِ دل مسلمان کو تڑپا دے گی ۔

روسی ٹی وی ’آر ٹی‘ کے مطابق طیب اردگان کا کہنا تھا کہ اگر مسلمانوں نے یروشلم کو اسرائیل کا دارلحکومت قرار دیئے جانے کے فیصلے کے خلاف مزاحمت نہ کی تو وہ دن دور نہیں جب خدانخواستہ مکہ بھی ان کے ہاتھ سے نکل جائے گا۔ استنبول میں منعقد ہونے والی ایک تقریب کے دوران انہوں نے مسلمانوں کو خبر دار کرتے ہوئے کہا ” اگر ہم نے یروشلم کو کھو دیا تو ہم مدینہ کا تحفظ کرنے کے قابل بھی نہیں رہیں گے اور اگر ہم نے مدینہ کو کھو دیا تو ہم مکہ اور کعبہ کو بھی کھو دیں گے۔ “

وہ خبر آگئی جس کا ڈر تھا، اسرائیلی فوج نے ایران کے اہم ترین اثاثے پر حملہ کر دیا اور پھر۔۔۔

واضح رہے کہ ترک صدر اس سے پہلے بھی امتِ مسلماءسے متعلقہ ہر معاملے پر کھل کر اپنی رائے کا اظہار کرتے رہے ہیں۔ امریکہ کی جانب سے مقبوضہ بیت المقدس کو اسرائیل کا دارلحکومت قرار دینے پر بھی انہوں نے واشگاف الفاظ میں امریکا کو خبردار کیا ہے کہ یہ اقدام خوفناک نتائج کا سبب بنے گا۔ انہوں نے مسلم ممالک کے حکمرانوں کو بھی یہ کہہ کر تنقید کا نشانہ بنایا ہے کہ اس نازک وقت پر انہوں نے خاموشی اختیا کر رکھی ہے۔

اس سلسلے میں مزید اقدامات کا اشارہ دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ” ترکی امریکا کے فیصلے کو چیلنج کرنے کیلئے ہر قانونی قدم اٹھائے گا۔ ہم اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل پر زور دیں گے کہ وہ ٹرمپ کے فیصلے کو منسوخ کریں اگر انہوں نے یہ نہیں کیا تو ہم دیگر دستیاب قانونی فورمز کا رخ کریں گے۔ ترکی فلسطین اور یروشلم کا دفاع کرنا کبھی نہیں چھوڑے گا ۔“

مزید : بین الاقوامی


loading...