شام میں خانہ جنگی کے باعث کٹھن حالات سے گزر ہے ہیں، مدد کی جائے،شام میں پھنسے خاندان کی حکومت پاکستان سے مدد کی اپیل

شام میں خانہ جنگی کے باعث کٹھن حالات سے گزر ہے ہیں، مدد کی جائے،شام میں پھنسے ...
شام میں خانہ جنگی کے باعث کٹھن حالات سے گزر ہے ہیں، مدد کی جائے،شام میں پھنسے خاندان کی حکومت پاکستان سے مدد کی اپیل

  



دمشق (ڈیلی پاکستان آن لائن) شام میں خانہ جنگی کے باعث ایک پاکستانی خاندان انتہائی کٹھن حالات سے گزر رہا ہے جبکہ خاندان کے سربراہ نے بین الاقوامی میڈیا کے ذریعے حکومت پاکستان سے مدد کی اپیل کی ہے۔

پاکستان کے معروف اداکار اسد صدیقی اور زارا نور عباس کی شادی کی تیاریاں زورو شور سے جاری

انادولو نیوز ایجنسی کے مطابق72سالہ محمود فاضل اشرف اور اس کی 62 سالہ اہلیہ سکرال بیبی سن 1975 میں نوکری کی تلاش میں شام میں جا کر بس گئے تھے، ملک میں 2011 میں چھڑنے والی خانہ جنگی کے بعد جھڑپوں سے بچنے کے لیے مسلسل نقل مکانی کرنے پر مجبور ہونے والا کنبہ اب مشرقی غوطہ میں محصور ہے۔ شام میں بشار الاسد انتظامیہ کے زیر محاصرہ ہونے والے مشرقی غوطہ میں پھنس کر رہ جانے والے پاکستانی کنبہ 36 برسوں کے بعد پہلی بار اطلاع ملنے والے اپنے عزیز و اقارب سے ملاقات کی امید رکھتا ہے۔ ایجنسی سے بات کرنے والے جوڑے کا کہنا ہے کہ وہ بڑے کٹھن حالات میں زندگی بسر کر رہے ہیں۔دوسری جانب انادولو ایجنسی کے پاکستان میں نمائندے نے اس کنبے کے آبائی وطن گجرات سے منسلک ایک گاوں تک رسائی حاصل کرکے  محمود فاضل کے بڑے بھائی اشرف سے ان کی بات چیت کرائی۔انہوں نے بتایا کہ ان کا بھائی سن 1981 میں آخری بار پاکستان آیا تھا لیکن میرے پر زور اصرار کے باوجود شام واپس لوٹ گیا تھا۔

لائیو ٹی وی پروگرامز، اپنی پسند کے ٹی وی چینل کی نشریات ابھی لائیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

مزید : بین الاقوامی


loading...