آئی جی پنجاب کا کرسمس پر گرجا گھروں کے سکیورٹی پلان پر عملدرآمد یقینی بنانے کا حکم

آئی جی پنجاب کا کرسمس پر گرجا گھروں کے سکیورٹی پلان پر عملدرآمد یقینی بنانے ...

  



لاہور(کرائم رپورٹر)انسپکٹر جنرل پولیس پنجاب شعیب دستگیر نے کہاہے کہ کرسمس کے موقع پر صوبہ بھر میں گرجا گھروں کی سیکیورٹی کیلئے ایس او پیز کے مطابق تمام دستیاب وسائل کو بروئے کار لاکر بھرپور اقدامات کئے جائیں جبکہ سیکیورٹی انتظامات کے دوران مسیحی عبادت گاہوں کے علاوہ کرسمس بازاروں اور تفریح گاہوں کی سیکیورٹی کو بطور خاص ملحوظ خاطر رکھا جائے۔ یہ ہدایات انہوں سنٹرل پولیس آفس میں اہم اجلاس کی صدارت کے دوران افسران کو ہدایات جاری کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں کرسمس سیکیورٹی، امن و امان کی صورتحال، اشتہاری ملزمان کی گرفتاری سمیت پولیس ٹیموں کی کارکردگی کا جائزہ لیا گیا۔انہوں نے مزیدکہاکہ ڈی پی اوز اپنی نگرانی میں گرجا گھروں اور پارکوں کے سکیورٹی پلان پر عمل در آمد کو یقینی بنائیں جبکہ اے کیٹیگری کے گرجا گھروں کی سیکیورٹی کیلئے سنائپرز اور سادہ لباس میں کمانڈوز کو بھی تعینات کیا جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ حساس گرجا گھروں کی سیکیورٹی کیلئے سی سی ٹی وی کیمروں کے ذریعے مانیٹرنگ کے علاوہ واک تھرو گیٹس کی تنصیب اور میٹل ڈٹیکٹرز کے ذریعے شہریوں کی چیکنگ کو ہر صورت یقینی بنایا جائے۔ انہوں نے تاکید کی کہ زہریلی شراب بیچنے والے عناصر کے خلاف اقدامات میں مزید تیزی لائی جائے۔

تاکہ ایسے عناصر کے محاسبے کا عمل مزید تیزی ہوسکے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ ہرضلع کے ٹاپ 20اشتہاریوں اور بدمعاشوں کی فہرست بنا کر انکی گرفتاری کیلئے بھرپور کریک ڈاؤن کیا جائے جس کی نگرانی ڈی پی اوز خود کریں اور اس کریک ڈاؤن کی رپورٹ ماہانہ بنیادوں پر سنٹرل پولیس آفس بھجوائی جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ سال رواں میں قبضہ مافیا کے خلاف درج کئے گئے مقدمات اور نامزد ملزمان کی گرفتاریوں کی تفصیلی رپورٹ سات روز کے اندر مرتب کرکے انہیں پیش کی جائے۔ اجلاس کے دوران ایڈیشنل آئی جی آپریشنز انعام غنی نے آئی جی پنجاب کو کرسمس کے سیکیورٹی پلان کے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ صوبے بھر میں 2778 گرجا گھروں کی حفاظت کے لیے تقریباََ22ہزار سے زائد افسر واہلکاروں سیکیورٹی ڈیوٹی سر انجام دیں گے جن میں 416انسپکٹرز، 1198سب انسپکٹرز، 2213اے ایس آئیز، 1693ہیڈ کانسٹیبلزاور15615کانسٹیبلز سمیت دیگر اہلکار شامل ہیں۔انہوں نے مزید بتایا کہ گرجا گھروں اور تفریحی پارکوں میں مسیحی شہریوں کی سیکیورٹی کیلئے تقریباََ3ہزارمیٹل ڈیٹیکٹرز اور واک تھرو گیٹس بھی استعمال کئے جائیں گے۔آئی جی پنجاب نے کرسمس سیکیورٹی کو مزید بہتر بنانے کیلئے سیکیورٹی ڈیوٹی پر مامور اہلکاروں کو بریفنگ دینے کا حکم دیا تاکہ وہ سیکیورٹی فرائض مزید تندہی اور ہائی الرٹ ہو کر سر انجام دیں۔ آئی جی پنجاب نے ڈکیتی، رابری، راہزنی اور گاڑی چوری کے واقعات کی روک تھام کیلئے فوری اقدامات کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہاکہ ایسے کیسز میں ملوث گرفتار اور مفرورملزمان کی تفصیلی رپورٹ تیار کرکے بھجوائی جائے اور مفرورو اشتہاری ملزمان کی گرفتاری کیلئے آج تک کی جانے والی کوششوں سے بھی آگاہ کیا جائے اور اس حوالے سے تفصیلی رپورٹ دس روز کے اندر مرتب کر کے مجھے دی جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ پرانی دشمنیوں سے متعلقہ کیسز اور ایسے واقعات میں ہلاکتوں کے واقعات کی روک تھام کیلئے سرکل افسران کی جانب سے کئے گئے انسدادی اقدامات کی تفصیل کے ساتھ ساتھ ان مقدمات میں نامزد اور نامعلوم ملزمان میں سے کتنے گرفتار ہوئے، کتنے بے گناہ ہوئے اور کتنے تاحال مفرور ہیں اورکیا ان مقدمات میں سرکل افسران نے کیس فائل میں کوئی ضمنی لکھی یا نہیں اس بارے میں تفصیلی رپورٹ دس روز کے اندر سنٹرل پولیس آفس بھجوائی جائے۔ انہوں نے مزیدکہاکہ جرائم کی وادراتوں میں استعمال ہونے والے لائسنس یافتہ اسلحہ کی منسوخی کیلئے محکمہ داخلہ پنجاب کو بھجوائے گئے کیسز میں سے زیرِ التوا کیسز کو جلد نمٹانے کے حوالے سے فالو اپ خطوط لکھے جائیں جبکہ جرائم کی وارداتوں میں لائسنس یافتہ اسلحہ استعمال کرنے والے ملزمان کے متعلق رواں برس کی جانے والی کاروائیواں سے متعلق بھی انہیں آگا ہ کیا جائے۔ انہوں نے تاکیدکی کہ جو ملزمان جرائم کی وارداتوں میں لائسنس یافتہ اسلحہ استعمال کرتے ہیں انکے خلاف قانون کے مطابق سخت سے سخت کاروائی میں ہرگز تاخیر نہ کی جائے۔ اجلاس میں ایڈیشنل آئی جی آئی اے بی اظہر حمید کھوکھر، ایڈیشنل آئی جی آپریشنز انعام غنی، اے آئی جی آپریشنز عمران کشور سمیت دیگر افسران بھی موجود تھے۔

مزید : علاقائی


loading...