کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی میں زچگی کے امرا ض پر تربیتی ورکشاپ

  کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی میں زچگی کے امرا ض پر تربیتی ورکشاپ

  



لاہور(پ ر)کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے 39ویں سالانہ سائنٹفک سیمپوزیم سے پہلے لیڈی ولنگڈن ہسپتال لاہور میں شعبہ امراض زچہ و بچہ کی سربراہ پروفیسر عائشہ ملک کی زیر نگرانی زچگی کے پیچیدہ امراض سے بچاؤ کیلئے تربیتی کورس کا انعقاد کیا گیا. جسمیں انگلستان سے آئے ہوئے مشہور گائناکالوجسٹ اور آبسٹیٹریشن ڈاکٹر قدیر وڑائچ نے لیکچر دیا اور اس طریقہ علاج کے متعلق حاضرین کو آگاہی دی۔انہوں نے کہا کہ لیڈی ولنگڈن میں ڈاکٹروں کی ٹیم بہترین خدمات سرانجام دے رہی ہے۔پروفیسر عائشہ ملک نے لیڈی ولنگڈن ہسپتال میں مریضوں کے علاج کے طریقے بتائے اور اس تربیتی کورس کی عملی اہمیت اجاگر کی۔پروفیسر خالد مسعود گوندل وائس چانسلر کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی نے اس تربیتی کورس / ورکشاپ میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ انہوں نے اپنے خطاب میں اس ورکشاپ کے منتظمین کی تعریف کی. انہوں نے کہا کہ کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کی گائنی فیکلٹی لیڈی ولنگڈن میں آنے والے مریضوں کو بہترین علاج مہیا کر رہی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ لیڈی ولنگڈن ہسپتال میں گائنی کے چار نئے شعبہ جات قائم کرنے کی تجویز زیر غور ہے۔کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کی فیکلٹی اور حکومت پنجاب کی مدد سے یہاں سٹیٹ آف دی آرٹ سہولیات مہیا کی جائیں گی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس ورکشاپ کے تربیت یافتہ ماہرین مریضوں کا بہترین علاج کرسکیں گے اور یقیناً دوران زچگی اموات کی شرح میں بھی نمایاں کمی آئے گی مستقبل میں امریکہ میں مقیم کنگ ایڈورڈ میڈیکل یونیورسٹی کے فارغ التحصیل ڈاکٹروں اور حکومت پنجاب کی مدد سے یہاں بہترین سہولیات اور وسائل سے آراستہ گائنی ٹاور بھی تعمیر کیا جائے گا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1