کسی کو نہیں چھوڑیں گے، مشرف کو اسکے ساتھیوں نے مروایا،سابق وکیل 

  کسی کو نہیں چھوڑیں گے، مشرف کو اسکے ساتھیوں نے مروایا،سابق وکیل 

  



 اسلام آباد (آئی ا ن پی) خصوصی عدالت کی جانب سے سنگین غداری کیس میں سابق صدرجنرل (ر)پرویز مشرف کو سزائے موت سنائے جانے پر ان کے سابق وکیل اختر نے شاہ جذباتی ہو کر ریفرنڈم کروانے کا مطالبہ کردیا۔ تفصیلات کے مطابق خصوصی عدالت نے مشرف کو آئین شکنی کا مرتکب قراردیتے ہوئے سزائے موت سنائی جس پرمیڈیا سے بات کرتے ہوئے اخترشاہ نے ریفرنڈم کروانے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ کسی کو نہیں چھوڑیں گے، مشرف کو اس کے ساتھیوں نے مروایا،ہم ایک ایک کے خلاف قانونی کارروائی کریں گے۔پرویزمشرف کے سابق وکیل نے ان کی حمایت کرتے ہوئے کہا کہ ملک کے اندرریفرنڈم ہوناچاہیے کہ جنرل (ر) پرویز مشرف کی جانب سے 3نومبر کا اقدام صحیح تھا یا غلط۔ یہ کیا بات ہوئی کہ کسی سے اجازت لیے بغیریا کابینہ میں جائے بغیر سیکرٹری داخلہ اٹھ کر عدالت میں شکایت کردیتا ہے جبکہ جنرل (ر) پرویز مشرف نے وزیراعظم سمیت اس وقت کے تمام اسٹیک ہولڈرز کی رائے لی تھی۔اخترشاہ نے میڈیا سے گفتگو میں واضح کیا کہ جنرل (ر) پرویز مشرف اس وقت صدر پاکستان بھی تھے اس لیے انہیں استثنی حاصل ہے۔

 سابق وکیل مشرف 

مزید : صفحہ آخر