فواد چودھری کی نائجیرین، ملائشین ہم منصوبوں سے ملاقات، ٹیکنالوجی کے شعبہ میں تعاون کی پیشکش

      فواد چودھری کی نائجیرین، ملائشین ہم منصوبوں سے ملاقات، ٹیکنالوجی کے ...

  



جدہ(محمد اکرم اسد) وفاقی وزیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد حسین چوہدری نے یہاں اسلامی ترقیاتی بنک اور ورلڈ اکیڈمی آف سائنسز فورم کے زیر اہتمام سائنس ڈپلومیسی  ورکشاپ کے افتتاحی تقریب  میں شرکت کی. ورکشاپ میں مختلف مسلم  ممالک کے سائنسدان اور سائنسی منتظمین شرکت کررہے ہیں۔ ورکشاپ کے دوران  وفاقی وزیر نے نائجیریا کے وزیر سائنس و ٹیکنالوجی محمد عبد اللہی سے ملاقات کی. ملاقات میں دونوں وزراء نے سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں دونوں ممالک کے درمیان تعاون پر بات چیت کی. وفاقی وزیر نے ٹیکنالوجی کے شعبے میں پاکستان کے تعاون کی پیشکش کی. انھوں نے انفارمیشن ٹیکنالوجی کے شعبے میں پاکستان کی ترقی کا ذکر کرتے ہوئے بتایا کہ پاکستان کی تمام آبادی کو ایک ڈیٹا بیس سے منسلک کردیا گیا ھے. ہم ڈرون ٹیکنالوجی کو زراعت کے فروغ کیلئے استعمال کررہے ہیں. اسکے علاوہ بائیو ٹیکنالوجی پارک بنا رہے ہیں. اور زراعت کی پیداوار کو ہائڈرو پونک ٹیکنالوجی کے ذریعے بڑھا رہے ہیں. وفاقی وزیر نے نائجیریا میں سائنس و ٹیکنالوجی یونیورسٹی بنانے کی پیشکش کی.  فواد چودھری نے انکو پاکستان دورے کی بھی دعوت دی۔نائجیریا کے وزیرنے کہا  کہ پاکستان سے قریبی دوستانہ تعلقات ہیں. انھوں نے سائنس کے شعبے میں پاکستان کی ترقی کو سراہا اور کہا کہ وہ پاکستان کے تجربات سے فائدہ اٹھائیں گے۔وفاقی وزیر فواد چودھری نے جد ہ میں سائنس ڈپلومیسی  ورکشاپ  کے دوران ملائشیاء کے وزیر اعظم کے  معاون خصوصی برائے سائنس ڈاکٹرعبدالحمید ذکری سے بھی ملاقات کی. ملاقات میں سائنس کے شعبے میں ایک دوسرے کے تجربات سے فائدہ اٹھانے پر بات ہوئی. وفاقی وزیر نے بتایا کہ وزیر اعظم عمران خان کی ھدایات کے تحت حکومت پاکستان نے سائنس و ٹیکنالوجی کے بجٹ میں 600 فیصد اضافہ کیا ھے. ہم اسلام آباد میں ایک بائیو ٹیک پارک بنا رہے  جو کہ ہربل ادویات کے حوالے سے جنوب ایشیا کا سب سے بڑا ادارہ ہوگا.وفاقی وزیر نے کہا کہ پاکستان اور ملائشیا کے درمیان سائنس اور ٹیکنالوجی کے میدان میں تعاون سے دونوں ممالک کو فائدہ ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ بائیو ٹیکنالوجی میں ملائشین تجربات سے پاکستان فائدہ اٹھا سکتا ہے۔ وفاقی وزیر نے ڈاکٹر عبدالحمید کو اگلے سال مارچ میں پاکستان کے دورے اور سائنس پر منعقد ہونے والے سیمنار سے خطاب کی دعوت دی جو ڈاکٹر حمید نے قبول کرلی۔ڈاکٹرعبدالحمید ذکری نیپاک ملائشیا کے برادرنہ تعلقات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ ان تعلقات کو بڑھانے کیلئے مختلف سیکٹرز میں وفود کے تبادلوں کی ضرورت ہے۔دریں اثناء وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد حسین چوہدری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ او آئی سی اور آئی ڈی پی کے تعاون سے پاکستان میں زراعت کو فروغ دینگے۔میری وزارت میں آنے کے بعد میری وزارت میں بجٹ کا 600 فیصد اضافہ کیا گیا ہے۔ہم پاکستان میں ویکسین بنائی گے۔ہم پاکستان میں بیٹری سے چلنے والی بسیں چلائیں گے عمران خان کا ویثرن ہے کہ آئیندہ دس سال میں پاکستان میں اپنے وسائل سے پراجیکٹ لگائینگے۔ہم پاکستان میں ورلڈ کلاس سائنٹسٹ پیدا کررہے ہیں 12 روپیہ کے ہم طلباء کو آشکار شپ دینے کا پروگرام ہے۔ آئندہ  سات ماہ میں رکشہ کو بھی بیٹری پر لے آئینگے۔آئی ڈی بی نے 500 ملین ڈالر کا بحٹ مخصوص کیا ہے ہم پاکستان میں ماڈل ویلیج بنائیں گے۔  فواد چوہدری نے کہا کہ ہماری ہمیشہ یہ خواہش ہے کہ پاکستان کے تما م ادارے اپنے dominمیں رہ کر کام کریں۔ملک کو اور عوام کو جوڑنا ہے آپس میں اختلاف پیدا کرنا نہیں۔فواد چوہدری نے کہا کہ آج کے پرویز مشرف کے فیصلے پر عوام کی اکثریت خوش نہیں۔ایک سوال کے  جواب میں فواد چوہدری نے کہا کہ کشمیر پر کوئی سودا نہیں کرسکتا مگر اندرون ملک ایسے کام ہمارے لوگ کرتے ہیں کہ میڈیا اور عوام اور حکومت کی توجہ کو ہٹانے کی کوشش کی جاتی ہے۔

فواد چودھری

مزید : صفحہ آخر