کراچی میں امن و امان کی بحالی سے ثقافتی اور تجارتی سرگرمیوں میں تیزی آئی: مراد علی شاہ 

کراچی میں امن و امان کی بحالی سے ثقافتی اور تجارتی سرگرمیوں میں تیزی آئی: ...

  



کراچی (این این آئی)وزیراعلی سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ ہم اپنے معاشرے کو تب بہتر کر سکتے ہیں جب ہم سب اپنے فرائض دیانتداری سے انجام دینگے۔ یہ بات انہوں نے 46ویں اسپیشلائیزڈ ٹریننگ پروگرام کے 34 پولیس افسران سے گزشتہ روزوزیراعلی ہاؤس میں ملاقات کے دوران خطاب کرتے ہوئے کہی۔ وزیراعلی سندھ کے ساتھ چیف سیکریٹری سندھ سید ممتاز علی شاہ، آئی جی پولیس ڈاکٹر کلیم امام، وزیراعلی سندھ کے پرنسپل سیکریٹری ساجد جمال ابڑو، سیکریٹری داخلہ، سیکریٹری خزانہ، سیکریٹری تعلیم، سیکریٹری صحت اور دیگر موجود تھے۔انہوں نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم اپنے معاشرے کو تب بہتر کر سکتے ہیں جب ہم سب دیانتداری سے اپنے فرائض انجام دیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے کراچی میں امن و امان بحال کیا۔ انہوں نے مزید کیاکہا کہ امن کی بحالی میں پاک آرمی، رینجرز کے ساتھ ملکر پولیس نے زبردست کام کیا۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں کراچی دنیا کا چھٹا خطرناک شہر قرار پایا تھا مگراب امن و امان کی صورتحال بہتر ہونے کے بعد شہر کراچی 76 نمبر پر ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس بہتری سے شہر میں تعلیمی، ثقافتی اور تجارتی سرگرمیوں میں تیزی آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ  1992 میں تھر میں کوئلے کے ذخائر دریافت ہوئے تھے اور اس وقت پاکستان کی وزیراعظم شہید بینظیر بھٹو نے دو یادداشتی دستخط کئے جس میں  ایک مائننگ اور دوسرا بجلی کی پیداوار کا تھا۔ انہوں نے کہا کہ یہ کام مختلف وجوہات کی بنا پر آگے نہیں بڑھ سکا۔ انہوں نے کہا کہ بڑی جدوجہد کے بعد ہم نے تھر کول بلاک ٹو سے بجلی کی پیداوار شروع کی اور  اب تھر میں سرمایہ کاری کیلئے سرمایہ کاروں کی قطاریں لگی ہوئی ہیں جوکہ سندھ حکومت کی کاوشوں کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ تھر کول کے ساتھ ساتھ سندھ حکومت نے دیگر ذرائع یعنی سولر اور ونڈ انرجی کے ذریعے بھی بجلی کی پیداوار پر توجہ مرکوز کی ہے۔ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ سندھ حکومت کو انرجی کے شعبے میں سب سے بڑا مسئلہ بجلی کی ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کا تھا جس کیلئے سندھ حکومت نے وفاق کے ساتھ طویل جدوجہد کی اور اس جدوجہد کے نتیجے میں سندھ حکومت کو تین ماہ قبل وفاق نے صوبائی سطح پر بجلی کی ٹرانسمیشن اور ڈسٹری بیوشن کمپنی قائم کرنے کی اجازت دی۔ انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے صوبہ میں سڑکوں کا جال بچھایا ہے اور پبلک پرائیوٹ پارٹنرشپ (پی پی پی) موڈ کے تحت متعدد منصوبے کامیابی کے ساتھ مکمل کئے گئے ہیں۔

مرادشاہ

مزید : صفحہ آخر


loading...