عبدالولی خان یونیورسٹی مردان میں دو روزہ قومی کانفرنس کا عنقاد

  عبدالولی خان یونیورسٹی مردان میں دو روزہ قومی کانفرنس کا عنقاد

  



مردان(بیورورپورٹ)ایگریکلچر ڈیپارٹمنٹ عبدالولی خان یونیورسٹی نے دو روزہ قومی کانفرنس کا انعقاد کیا کانفرنس کا موضوع تھا Biochar for climate chage کانفرنس زرعی ڈیپارٹمنٹ عبدالولی خان یونیورسٹی نے آرگنائز کیا تھا جبکہ پاکستان سوسائٹی آف سائنٹیفک ریسرچ اور اورک آفس نے تعاون کیا تھا کانفرنس میں ملک بھر سے جامعات کے پروفیسرز اور طلبہ و طالبات نے کثیر تعداد میں شرکت کی کانفرنس دو روز تک جاری رہے گا کانفرنس کے پہلے روز مہمان خصوصی وائس چانسلر عبدالولی خان یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر خورشید خان تھے انہوں نے کہا پاکستان بھر سے دیگر جامعات اور اعلیٰ تعلیمی و تحقیقی ادارے مبارکباد کے مستحق ہے کیونکہ اس طرح کی کانفرنس میں ایگریکلچر سے متعلق جدید ترین تحقیقات اور اس ضمن میں آئندہ پیش آنے والے چیلنجز کو سمجھنے اور ان سے عہدہ براء ہونے میں مدد ملتی ہے کہ ہمیں کوشش کرنی چاہیے کہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں صنعتی اداروں سے روابط کو تیزکیا جائے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس کانفرنس کی بدولت شرکاء کو اپنے تجربات اور صلاحیتیں ایک دوسرے کے ساتھ تبادلہ کرنے کا موقع ملے گا جب کہ اس موقع پر سابق وائس چانسلر ایگریکلچر یونیورسٹی پشاور پروفیسر ڈاکٹر خان بہادر مروت ڈاکٹر محمد عارف ڈاکٹر صائمہ ہاشم ڈاکٹر حاضر رحمن ڈاکٹر محمد ریاض ض چیئرمین ڈیپارٹمنٹ ایگریکلچر پروفیسر ڈاکٹر ظفر حیات اور دیگر مقررین موجود تھے کانفرنس کے چیف آرگنائزر ڈاکٹر کوثر علی نیخطاب میں کہا کہ عبدالولی خان یونیورسٹی پاکستان کی پہلی یونیورسٹی ہے جنہوں نے بائیو چار پر نیشنل کانفرنس منعقد کیا اس سے پہلے پاکستان میں کسی نے بائیو کار پر کام نہیں کیا اور نہ ہی اس طرح کے کانفرنس کا انعقاد کیا ہے انہوں نے مزید کہا کہ بڑھتی ہوئی آبادی کو خوراک کی فراہمی آج کا سب سے بڑا چیلنج ہے ہمیں موسمی تبدیلی کے اثرات کو سمجھنا ہوگا اور اس کا اثر کم کرنا ہوگا آخر میں ڈیپارٹمنٹ کے چیئرمین پروفیسر ڈاکٹر ظفر حیات نے کہا کے ایگریکلچر ڈیپارٹمنٹ اس سال چھ مختلف قسم کے کانفرنسز اور ورکشاپ منعقد کرچکی ہیں جو ڈیپارٹمنٹ کے لیے ایک اعزاز ہے انہوں نے نے تمام فیکلٹی ممبران کی کوششوں کو سراہا اور کانفرنس کے شرکاء ڈاکٹر محمد عرفان ڈاکٹر حسین اور ڈاکٹر بادشاہ اسلام کو کامیاب کانفرنس منعقد کرنے پر مبارک باد دی دیں اس موقع پر وائس چانسلر عبدالولی خان یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر خورشید احمد خان نے کہا پاکستان بھر سے دیگر جامعات اور اعلیٰ تعلیمی و تحقیقی ادارے مبارکباد کے مستحق ہے کیونکہ اس طرح کی کانفرنس میں بائیو ٹیکنالوجی سے متعلق جدید ترین تحقیقات اور اس ضمن میں آئندہ پیش آنے والے چیلنجز کو سمجھنے اور ان سے عہدہ براء ہونے میں مدد ملتی ہے کہ ہمیں کوشش کرنی چاہیے کہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں صنعتی اداروں سے روابط کو تیزکیا جائے تاکہ بائیو ٹیکنالوجیمیں استعمال ہونے والے اجزاء، مختلف کیمیائی مواد اور ان پر تحقیقی پیشرفت کو منظم کرسکیاور جس سے عام لوگ مستفید ہوں پاکستان میں ہر سال بہت زیادہ لوگ متعدی بیماریوں کا شکار ہوجاتے ہیں جس کی روک تھام کے لئے اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ اس کانفرنس کی بدولت شرکاء کو اپنے تجربات اور صلاحیتیں ایک دوسرے کے ساتھ تبادلہ کرنے کا موقع ملے گا اور متعدی بیماریوں کے خلاف مثبت اقدامات اور سفارشات مرتب کی جا سکیں گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...