مشرف کیس کے تمام قانونی پہلوؤں کا جائزہ رہے ہیں،ایم کیو ایم

  مشرف کیس کے تمام قانونی پہلوؤں کا جائزہ رہے ہیں،ایم کیو ایم

  



کراچی (اسٹاف رپورٹر)متحدہ قومی موومنٹ پاکستان کے ترجمان نے سنگین غداری کیس کے فیصلے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ مشرف کیس کے تمام قانونی پہلوؤں کا جائزہ رہے ہیں۔یقینا یہ مقدمہ اپیل میں بھی جائے گا جو ہر فریق کا حق ہے۔ترجمان نے کہا کہ آئین کے آرٹیکل 6 کی شق 2 کے تحت آئین شکنی کے مرتکب شخص کی مدد و اعانت کرنے والے افراد بھی ویسی ہی سزا کے مستحق ہوتے ہیں لیکن یہاں ایسا نظر نہیں آ رہا۔ایم کیو ایم پاکستان کے ترجمان نے کہا کہ آئین شکنی محض مارشل لا یا ایمرجنسی لگانے کا ہی نام کیوں ہے؟ صبح و شام نام نہاد جمہوری حکومتیں ملک کے طول و عرض میں آئین کی مختلف شقوں سے رو گردانی کرتی نظر آتی ہیں۔ترجمان نے کہا کہ اس وقت ملک میں ادارہ جاتی استحکام کی شدید ضرورت ہے ورنہ معیشت کے مزید ابتر ہونے سے ملک عدم استحکام کا شکار ہوگا۔آخر میں ترجمان نے کہا کہ یہ سوال بھی اٹھتا ہے کہ محض مشرف کا مارشل لا غلط تھا اور ایوب، یحییٰ اور ضیا کے مارشل لا پر معافی؟ کہیں یہ امتیاز مشرف کے نسلی شناخت کی بنا پر تو نہیں۔

مزید : صفحہ اول