دنیا کی واحد بچی جو 2 برس کی عمر میں ہی بوڑھی ہوگئی

دنیا کی واحد بچی جو 2 برس کی عمر میں ہی بوڑھی ہوگئی
دنیا کی واحد بچی جو 2 برس کی عمر میں ہی بوڑھی ہوگئی

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) کوئی مرض کتنا ہی نایاب کیوں نہ ہو، دنیا میں وہ کئی لوگوں کو لاحق ہوتا ہے لیکن ایک بیماری ایسی ہے جس کے متعلق آپ سن کر دنگ رہ جائیں گے کہ اس وقت دنیا میں وہ بیماری صرف برطانیہ کی ایک2سالہ بچی کو لاحق ہے۔ اس کے علاوہ دنیا میں کوئی اور شخص اس بیماری میں مبتلا نہیں۔ میل آن لائن کے مطابق یہ بیماری ’پروجیریا‘ یا بنیامین بٹن ڈیزیز کی قسم ’مینڈیبیولواکریل ڈسپلیشا‘ (Mandibuloacral dysplasia)ہے۔ یہ بیماری بچوں کو پیدائش کے فوری بعد ابتدائی چند ہفتوں میں لاحق ہوتی ہے۔

اس بیماری میں مبتلا بچہ انتہائی کمزور اور لاغر ہو جاتا ہے اور اس کے چہرے کے عوارض کسی عمر رسیدہ شخص جیسے ہو جاتے ہیں۔ برطانوی شہر لسیسٹر کی ایسلا کلپیٹرک سکریٹن نامی بچی دنیا میں اس مریض کی واحد مریض ہے۔ دو سال کی عمر ہو جانے کے باوجود اس بچی کا وزن صرف 7کلوگرام ہے۔بچی کو جب ڈاکٹروں کے پاس لیجایا گیا اور انہوں نے ٹیسٹ کیے تو نتائج دیکھ کر وہ بھی حیران رہ گئے۔ اس کے کچھ جینز میوٹ تھے جس کی وجہ سے اسے یہ انتہائی نایاب بیماری لاحق ہوئی۔ بچی کے 36سالہ والدکیل سکریٹن اور والدن سٹیسی کلپیٹرک کاکہنا ہے کہ ”بیماری کے باوجود ایسلا بہت خوش باش رہنے والی بچی ہے۔ وہ ہمہ وقت ہنسی مسکراتی رہتی ہے۔ وہ تاحال بول نہیں سکتی اور صرف اشاروں کے ذریعے ہی باتیں کرتی ہے۔“ بچی کے والد کا کہنا تھا کہ وہ اپنی بیٹی کو پیار سے دادی اماں کہہ کر بلاتا ہے کیونکہ بیماری کی وجہ سے اس کا چہرہ کسی بڑی عمر کی عورت جیسا لگتا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس