وزیراعظم ناکامیاں چھپانے اور ڈپریشن دور کرنے کے لیے یہ کام کرتے ہیں،سراج الحق نے حیران کن دعویٰ کر دیا

وزیراعظم ناکامیاں چھپانے اور ڈپریشن دور کرنے کے لیے یہ کام کرتے ہیں،سراج ...
وزیراعظم ناکامیاں چھپانے اور ڈپریشن دور کرنے کے لیے یہ کام کرتے ہیں،سراج الحق نے حیران کن دعویٰ کر دیا

  



راوپنڈی(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ وزیراعظم ناکامیاں چھپانے اور ڈپریشن دور کرنے کے لیے زیادہ تر غیرملکی دوروں پر رہتے ہیں،حکومت نے 15ماہ میں سب سے زیادہ قرضے اور یوٹرن لیے اور نوجوانوں کو مایوس کیا،پی ٹی آئی کو لوگوں نے تبدیلی کے نام پر ووٹ دیا تھا مگر یہ حکومت اپنے پہلے چند ماہ میں ہی ناکام ہوگئی،72سال سے اقتدار پر قابض قوتوں نے ملک کی اسلامی شناخت کو ختم کرنے اور نظریے سے بے وفائی کا رویہ اپنائےرکھا،پاکستان میں حقیقی تبدیلی صرف جماعت اسلامی لاسکتی ہے،قول وفعل میں تضاد اورٹرمپ سےزیادہ جھوٹ بولنےوالےتبدیلی نہیں لا سکتے،  قوم کے پاس اب جماعت اسلامی کے علاوہ دوسرا کوئی آپشن نہیں،کشمیر بھارت کا حصہ نہیں،بھارت کا قبرستان بنےگا،کشمیر کی آزادی ہمارے لیےغیرت اور زندگی اور موت کا مسئلہ ہے،کشمیر کے بغیرپاکستان نامکمل ہے،22دسمبر کولاکھوں لوگ ڈی چوک اسلام آباد پہنچیں گے۔

راولپنڈی میں سٹوڈنٹس ایکسپو سےخطاب کرتےہوئےسینیٹرسراج الحق نےکہاکہ پاکستان کی سا لمیت اورتحفظ سےکھیلنےاورپاکستان کوایک ناکام ریاست بنانےکی سازش کرنے والی دشمن قوتیں اپنے مکروہ عزائم میں ناکام ہونگی،اسلامی جمعیت طلبہ کی صورت میں لاکھوں نوجوان اپنے ملک کی عزت اور اس کے نظریے کی آبیاری اپنے خون سے کرنے کو تیار ہیں،پاکستان کی حفاظت ہمیں اپنی جان سے بھی زیادہ عزیز ہے،جب تک جمعیت کے باہمت اور نظریہ اسلام پرمر مٹنے والے نوجوان موجود ہیں،پاکستان کی طرف کوئی میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکتا،پاکستان انشاءاللہ قیامت تک قائم رہے گا۔انہوں نے کہا کہ اسلامی جمعیت طلبہ کی تربیت کا ہی نتیجہ ہے کہ ہم دیانتداری سے ملک و قوم کی خدمت کررہے یں،ہم آکفسورڈ اور لند ن سے نہیں پڑھے لیکن ہمارے کردار پر کوئی انگلی نہیں اٹھا سکتا،قومی اور بین الاقوامی ادارے ہماری دیانتداری کی گواہی دیتے ہیں،سینیٹ،قومی اورصوبائی اسمبلیوں میں بہترین کارکردگی جماعت اسلامی کے ممبران کی رہی۔

سینیٹرسراج الحق نےکہاکہ ہمارامقابلہ اُن سامراجی قوتوں سےہےجنہوں نےعالم اسلام کونسل اورفرقوں کی بنیادپرتقسیم کیا،اِن سامراجی قوتوں نےاسلامی دنیاکے وسائل پرقبضہ کیا،مسلم دنیاکوباہم دست وگریبان کرنےاورلاکھوں مسلمانوں کاخون بہانےوالوں کےساتھ ہماری لڑائی ہے،یہ قوتیں اپنا تباہ کن اسلحہ بیچنےکے لیے دنیامیں امن قائم نہیں ہونے دیتیں۔اُنہوں نے کہا کہ دشمن ہماری تہذیب اور تایخ پر حملہ آور ہے،اس کا اصل ہدف ہماری نوجوان نسل کو گمراہی کے راستے پر لگانا ہےلیکن اسلامی جمعیت طلبہ اس کے راستے میں سب سے بڑی رکاوٹ ہے ،اسلامی جمعیت طلبہ سچائی،دیانتداری انقلاب اور تبدیلی کی علامت ہے،جمعیت قانون کا احترام کرنے اور امن و امان قائم رکھنے میں سب سے بڑھ کرقربانیاں دے رہی ہے،اسلامی یونیورسٹی میں غنڈوں نے کتاب میلہ پر حملہ کرکے اس کو سبوتاژ کیا اورطفیل الرحمان کو شہید اور کئی کارکنوں کو زخمی کیامگر جمعیت نے صبر و استقامت کا مظاہر ہ کرتے ہوئے قانون کی پاسداری کی،اس جذباتی لمحے میں بھی جمعیت کے نوجوان مشتعل نہیں ہوئے اور کسی پر ہاتھ نہیں اٹھایا۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ سیاسی لیڈر ایک دوسرے کو گالیاں اور نفرت و تعصبات کو ہوا دیتے ہیں لیکن اسلامی جمعیت طلبہ نے معاشرے میں مثبت سوچ اور تہذیب کو فروغ دیا ہے۔انہوں نےکہاکہ اللہ تعالیٰ نےپاکستان کوبےپناہ وسائل سے نوازا،ہمیں ایٹمی قوت بنایا اورسب سےبڑھ کردنیا میں ہم ایسی قوم ہیں جس میں65فیصدنوجوان ہیں لیکن اِس کےباوجودہم آئی ایم ایف اورورلڈ بینک کے مقروض ہیں،ملک میں غربت مہنگائی بے روزگاری اور بدامنی جیسے مسائل کے اصل مجرم وہ حکمران ہیں جنہوں نے 72سال سے ملکی اقتدار پر قبضہ کررکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ ملک و قوم کا سب سے بڑامسئلہ ہی یہ ہے کہ قیادت کمزوروں اوربزدلوں کےہاتھ میں ہے،ملک کوایک دیانتداراورجرات مندقیادت کی ضرورت ہےجودشمن کی آنکھ میں آنکھ ڈال کربات کرسکے،کرپٹ قیادت نے دنیابھرمیں پاکستان کےعزت و و قارکو نیلام کیا۔اُنہوں نےکہاکہ اِس حکومت کےلیےسب سےزیادہ قربانیاں نوجوانوں نےدیں اورحکومت نےسب سےزیادہ مایوس نوجوان کو ہی کیا ہے،نوجوان اعلیٰ ڈگریوں کے باوجود روزگار اور ملازمتوں کے لیے مارے مارے پھر رہے ہیں،غربت مہنگائی اور بے روزگاری میں مزید اضافہ ہوگیاہے۔

مزید : قومی