”عدالتوں نے نظریہ ضرورت کے تحت فیصلہ نہیں دیاتو پھر ہم ۔۔۔“شہلا رضابھی میدان میں آگئیں

”عدالتوں نے نظریہ ضرورت کے تحت فیصلہ نہیں دیاتو پھر ہم ۔۔۔“شہلا رضابھی ...
”عدالتوں نے نظریہ ضرورت کے تحت فیصلہ نہیں دیاتو پھر ہم ۔۔۔“شہلا رضابھی میدان میں آگئیں

  



کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن)صوبائی وزیر شہلارضانے کہاہے کہ فوج کاحلف یہ ہے کہ وہ آئین کی پاسداری کریں گے اور سیاسی سرگرمیوں میں شامل نہیں ہونگے ،اس بار اگر عدالتوں نے نظریہ ضرورت کے تحت فیصلہ نہیں دیا تو پھر ہم کیاکرسکتے ہیں؟

دنیانیوز کے پروگرام ”آن دا فرنٹ“میں گفتگو کرتے ہوئے شہلارضا نے کہا کہ پرویز مشرف کے ساتھ جو دوسرے لوگ ہیں ان کوبعد میں بھی سنا جاسکتاہے ، فوج کاحلف یہ ہے کہ وہ آئین کی پاسداری کریں گے اور سیاسی سرگرمیوں میں شامل نہیں ہونگے۔

شہلا رضاکاکہنا تھا کہ حلف کے باوجود ایک جنرل سیاسی سرگرمیوں میں ملوث بھی ہوا اوربعد میں اپنی سیاسی جماعت بھی بنا لی، اس کامطلب یہ ہے کہ پرویز مشرف کا پہلے سے ہی ارادہ تھا ۔ انہوں نے کہا اس بار اگر عدالتوں نے نظریہ ضرورت کے تحت فیصلہ نہیں دیا تو پھر ہم کیاکرسکتے ہیں؟

مزید : قومی