گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج استرزئی کیلئے 1 کروڑ کا فنڈ منظور

  گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج استرزئی کیلئے 1 کروڑ کا فنڈ منظور

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج استرزئی کی قسمت جاگ اٹھی 8 سالوں بعد کالج کی تعمیر مکمل ہونے کا یقین‘ صوبائی مشیر سائنس کی ذاتی دلچسپی سے 1 کروڑ کا فنڈ منظور جنوری 2021 میں کالج کا افتتاح کرنے کا اعلان تفصیلات کے مطابق گورنمنٹ گرلز ڈگری کالج استرزئی جس کا سنگ بنیاد 2013 میں رکھا گیا تھا جس کے بعد پانچ سال تحریک انصاف کی حکومت میں یہ کالج مکمل نہ ہو سکا اور اب دوبارہ صوبے میں تحریک انصاف کو حکومت کرتے تقریباً 30 ماہ گزر چکے ہیں مگر اس بدقسمت کالج کی تعمیر ہے کہ مکمل ہونے کا نام نہیں لے رہی جس میں بڑی وجہ فنڈز کی کمی اور محکمے کے افسران کی نالائقی بھی شامل ہے مگر اب استرزئی کی طالبات کی مایوسی ختم ہونے والی ہے وزیر اعلیٰ کے مشیر ضیاء اللہ بنگش نے گزشتہ روز ہائیرایجوکیشن کے صوبائی وزیر کامران بنگش کے ساتھ مل کر اس منصوبے کو مکمل کرنے پر سنجیدگی سے اتفاق رائے کیا اورکالج کی تعمیر میں رکاوٹ کی وجہ سے 1 کروڑ روپے کا فنڈ ریلیز کرتے ہوئے محکمہ کے افسران کو ہدایت کی وہ تمام تعمیراتی کام ایک ماہ کے اندر مکمل کرے تاکہ جنوری 2020 میں کالج کا باقاعدہ افتتاح کیا جا سکے اس موقع پر ضیاء اللہ بنگش جن کی کوشش سے 1 کروڑ فنڈ منظور ہوا ہے اس سے بقایا تعمیراتی کام مکمل ہو سکے اور آئندہ تعلیمی سیشن سے علاقہ بنگش کی تینوں یونین کونسلوں کی بچیوں سمیت جوزارہ‘ رئیسان اور دیگر اردگرد کی کی بچیوں کو گھروں کے نزدیک تعلیم حاصل کہرنے کے مواقع میسر ہو سکیں۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -