اے پی ایس کے شہداء کے ساتھ اشتہار میں حکومت نے امریکی بچے کو بھی شامل کردیا

اے پی ایس کے شہداء کے ساتھ اشتہار میں حکومت نے امریکی بچے کو بھی شامل کردیا
اے پی ایس کے شہداء کے ساتھ اشتہار میں حکومت نے امریکی بچے کو بھی شامل کردیا

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن ) پشاور کے آرمی پبلک سکول پر حملے کو چھ سال بیت گئے  اور گزشتہ دنوں شہداء کے چھٹی برسی کے موقع  ایصال ثواب اور خراج تحسین کے لیے تقریبات کا اہتمام بھی کیا گیا لیکن اس موقع پر حکومت پنجاب کی طرف سے ایک بڑے پاکستانی اخبار میں چھپوائے گئے اشتہار میں اے پی ایس کے شہداء کے ساتھ ایک امریکی بچے کی تصویر بھی شامل کر دی گئی ۔ 

اس اشتہار میں دکھائی دینے والا چھ سالہ بچہ نواہ پوزنر ہے جو 2012 ء میں امریکی سکول میں حملے کے دوران مارا جانیوالا سب سے کم عمر تھا۔ نواہ کی تصویر کے ساتھ یہ اشہار روزنامہ جنگ اور روزنامہ ایکسپریس میں تصاویر کی تصدیق کیے بغیر چھپوادیاگیا، مذکورہ تصویر  اس تصویر کا حصہ ہے جو اے پی ایس کے شہداء بچوں کی تصاویر کا مجموعہ ہے ۔ 

یادرہے کہ اے پی ایس پر حملے میں 140سے زائد افراد شہید ہوگئے تھے جن میں سے اکثریت معصوم بچے تھے لیکن اس اشتہار نے حکومت پنجاب کی کارکردگی پر سوال اٹھا دیا جو اتناا ہم دن بھی مناسب طریقے سے نہ مناسکی ۔ اس سے نہ صرف حکومتی غفلت واضح ہوتی ہے بلکہ متاثرہ فیملیز کے جذبات بھی مجروح ہوئے ہیں۔ 

مزید :

قومی -