آپ کو قرض مانگتے ہوئے شرم نہیں آتی؟ اینکر نے عمران خان سے سخت سوال پوچھ لیا

آپ کو قرض مانگتے ہوئے شرم نہیں آتی؟ اینکر نے عمران خان سے سخت سوال پوچھ لیا
آپ کو قرض مانگتے ہوئے شرم نہیں آتی؟ اینکر نے عمران خان سے سخت سوال پوچھ لیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ انہیں قرض مانگتے ہوئے شرمندگی ہوئی لیکن ملک کیلئے یہ قدم اٹھانا پڑا جبکہ قرضوں کے علاوہ کوئی چارہ بھی نہیں تھا ۔

نجی ٹی وی"سماءنیوز"کےپروگرام میں اینکر پارس جہانزیب نےوزیراعظم عمران خان سےسوال کیا کہ کیاآپ کو دوسرے ملکوں سے قرض مانگتے ہوئےشرم نہیں آتی ؟ اس سوال کا جواب دیتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ حکومت میں آئے تو بڑے بڑے چیلنجز کا سامنا کرنا پڑا گزشتہ11سال میں ملکی قرضوں کوچارگنا تک بڑھادیاگیاجبکہ آمدنی نہیں بڑھائی گئی,جب تک آمدن نہیں بڑھے گی تب تک قرضےلینےپڑیں گے،  ملک مقروض ہورہاتھااوریہ غیرملکی دورے کررہےتھے،زرداری نےدبئی کے50اورنوازشری شریف نے21غیرملکی دورےکیے،پاکستان کا قرضہ 6ہزارارب سے30ہزارارب پرپہنچ گیا تھا،ہمارےزرمبادلہ ذخائرصفر پر پہنچ چکےتھے،مجھےاس کا اندازہ نہیں تھا کہ سرکلرڈیڈکس طرح بڑھتا ہے?

انہوں نےکہا کہ مجھےبھی دوست ممالک سےپیسےمانگتےہوئےشرمندگی ہوئی لیکن اور کوئی چارہ نہیں تھا،جب آپ اپنے کسی سگے بہن، بھائی یا دوست ،رشتے دار کے پاس پیسے مانگنے جاتے ہیں تو وہ ایک دو بار دے دیتے ہیں لیکن تیسری بار وہ نہیں دیتے,مجھے بھی دوسرے ملکوں سے   پیسے مانگتے ہوئے شرمندگی ہوئی لیکن ملک کیلئے قرض لینا پڑا۔

مزید :

قومی -