ویزا فری انٹری؛ نیوزی لینڈ کو جعلسازوں کی جانب سے فائدہ اٹھانے کا خدشہ

ویزا فری انٹری؛ نیوزی لینڈ کو جعلسازوں کی جانب سے فائدہ اٹھانے کا خدشہ

  



ویلنگٹن( نیٹ نیوز) نیوزی لینڈ کے امیگریشن ماہرین نے ورلڈ کپ کے دوران ملک میں ویزا فری انٹری سے جعلسازوں کے فائدہ اٹھانے کا خدشہ ظاہر کیا ہے۔میگا ایونٹ کیلیے آسٹریلوی ویزے کے حامل شائق کو نیوزی لینڈ ا آمد پر ویزا جاری کیا جا رہا ہے۔ ماہرین کے مطابق شائقین کی آڑ میں وہ لوگ بھی آسانی سے ملک میں داخل ہوسکتے ہیں جن کا عام حالات میں شاید یہاں آنا ممکن ہی نہ ہوتا، انھیں صحت سے متعلق پابندیوں کو پوراکرنا پڑے گا نہ ہی یہ ثابت کرنے کی ضرورت ہوگی کہ نیوزی لینڈ میں رہنے کیلیے ان کے پاس کافی رقم موجود ہے۔مقامی اخبار نے دعویٰ کیا کہ ایک چینی پاسپورٹ ہولڈر کو بنگلہ دیش اور اسکاٹ لینڈ کے درمیان نیلسن میں شیڈول میچ کا صرف 10 ڈالر مالیت والا ٹکٹ دکھانے پر ملک میں داخل ہونے کی اجازت دی گئی۔

،اس نے واضح طور پر کہا کہ میرا میچ دیکھنے کا کوئی ارادہ بھی نہیں ہے۔ عام طور پر چین میں نیوزی لینڈ کا ویزا حاصل کرنے کیلیے 22 ہزار ڈالر کے قریب رقم خرچ کرنا پڑتی ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اگر کسی شائق کے پاس نیوزی لینڈ کا ویزا ہے تب بھی اسے آسٹریلیا جانے کے لیے وہاں کا ویزا حاصل کرنا پڑے گا۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی


loading...