پولیس لائنز کے باہر خود کش حملے کے تانے بانے افغانستان سے مل گئے؟

پولیس لائنز کے باہر خود کش حملے کے تانے بانے افغانستان سے مل گئے؟

  



 لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) لاہورمیں ہونیوالے ممکنہ خود کش حملے کی نوعیت نے تحقیقاتی اداروں کو چکراکررکھ دیاہے ،یہ پہلا موقع ہے جب ضرب عضب کے شروع ہونے کے بعد کسی دھماکے کے بعد فوری طورپر آگ بھڑک اُٹھی اور سفید کی بجائے گہرے سیاہ رنگ کے بادل اُٹھتے دکھائی دیئے۔ اس سے پہلے عمومی طورپر دیکھاگیاہے کہ افغانستان کے دارلحکومت کابل میں اتحادی افواج ،بڑی شخصیات یا غیرملکی سفارتخانوں یا اُن کے قریب ہونیوالے دھماکوں کی نوعیت قلعہ گجرسنگھ پولیس لائنز کے قریب ہونے والے دھماکوں سے ملتی جلتی ہے ۔ آپ دومئی 2012ء کو امریکی صدرباراک اوباما کے دورہ کے موقع پر ہونیوالے حملے کی تصویر ہی دیکھ لیں جس میں سیاہ رنگ کا دھواں اُٹھتادکھائی دے رہاہے ۔ اِسی طرح نیپالی شہریوں کے قتل کا سبب بننے والے بم حملے سمیت دیگر حملوں کے فوری بعد گاڑیوں میں آگ لگ گئی اور سیاہ دھواں دکھائی دیا۔

مزید : صفحہ آخر