ریاستی ادارے آئینی تحفظ دیں تو مسئلہ بلوچستان کے حل کیلئے حاضر ہو ں ،محمو د اچکزئی

ریاستی ادارے آئینی تحفظ دیں تو مسئلہ بلوچستان کے حل کیلئے حاضر ہو ں ،محمو د ...

  



 کوئٹہ( آن لائن ،اے این این) پشتونخواملی عوامی پارٹی کے مرکزی چےئرمین محمود خان اچکزئی نے کہا ہے کہ مسئلہ بلوچستان کے حل کیلئے منتخب ریاستی ادارے آئینی تحفظ فراہم کریں تو اہم کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہوں ، پاکستان‘ ایران‘چین اور افغانستان ملکر چارملکی مشترکہ کوششوں سے تین ماہ میں خطے سے دہشتگردی کے عنصر کو ختم کرسکتے ہیں ،گوادر کاشغر کو ریڈرو کیلئے روٹ کا فیصلہ تمام طبقات کو اعتماد میں لیکر کرنا ضروری ہے ورنہ اس سے ملک میں مزید بحران جنم لے سکتے ہیں سینٹ الیکشن میں ہارس ٹریڈنگ کے خاتمے کیلئے پانچ جماعتی فارمولے کی حمایت کرتے ہیں کوئٹہ میں پشتونوں کی50ہزار شناختی کارڈ بلاک کرنا زیادتی ہے نادرا اس سلسلے میں نظر ثانی کریں ورنہ ہم مجبور ہو کر اتحادی حکومت کیخلاف سڑکوں پر نکل آئینگے ۔یہ بات انہوں نے اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،محمود خان اچکزئی نے کہا کہ پشتون سرزمین میں آباد تمام اقوام پاکستانی ہے اس بارے میں کسی سے سرٹیفکیٹ لینے کی ضرورت ہے اور نہ کسی کا احسان ہے بلکہ اس سلسلے میں تعصبانہ رویہ اختیار کرتے ہوئے بعض قوتیں پشتونوں کو افغان مہاجرین سے جوڑنا چاہتے ہیں جو حقیقت کے برعکس ہے اور اس سے مزید نفرتیں پیدا ہو نگے انہوں نے کہا کہ افغانستان میں جب روس نے حملہ کیا تو اس وقت 40لاکھ افغان مہاجرین ہجرت کرکے یواین سی آر کے ذریعے پاکستان میں آکر افغان مہاجر کیمپوں میں آباد ہو گئے جن کی آج تک یو این سی آر کے ساتھ رجسٹریشن موجود ہے انہوں نے کہاکہ ہر پگڑی اور داڑھی رکھنے والا نہ دہشتگرد اور نہ افغان مہاجر ہے بلکہ حقیقی پاکستانی ہے، گوادر سے کاشغر روٹ تبدیل ہونے کے بارے میں بہت سے سیاسی جماعتیں بیانات کے ذریعے زور لگارہی ہے یہ اچھی بات ہے کہ وہ اپنے علاقے کیلئے احتجاج اور بیانات دیں لیکن اس سلسلے میں پشتونخوا کو ٹارگٹ بنانا درست نہیں کیونکہ پشتونخوا نے اس مسئلے پر سب سے پہلے آواز بلند کی اور وزیراعظم کے سامنے اس بات کو رکھا کہ یہ روٹ بلوچستان کے راستے گزرنا چاہئے اس سے بلوچستان اور جنوبی پشتونخوا میں ترقیاتی دور کا آغاز ہونے کے ساتھ روٹ 600کلو میٹر کم بھی پڑتا ہے انہوں نے کہاکہ اس روٹ کی تبدیلی ہمیں قبول نہیں بلکہ وزیراعظم کو یہ تجویز بھی رکھ دی ہے کہ گوادر کاشغر روٹ کا فیصلہ کرنے کیلئے تمام سیاسی جماعتوں کا کانفرنس بلائی جائے اور اس قومی مسئلے پر تمام قومی جماعتوں کو اعتماد میں لیکر کوئی فیصلہ کیا جائے خدائے نخواستہ اگر یکطرفہ فیصلہ کیا تو اس سے ملک میں مزید بحران جنم لے سکتے ہیں ۔ محمود اچکزئی

مزید : صفحہ آخر


loading...