پولیس لائنز قلعہ گجرسنگھ کے باہر خودکش دھماکہ،2پولیس افسروں سمیت 5افراد شہید

پولیس لائنز قلعہ گجرسنگھ کے باہر خودکش دھماکہ،2پولیس افسروں سمیت 5افراد شہید

  



لا ہور (وقائع نگا ر خصو صی ،کرا ئم سیل )لاہور کو ایک مرتبہ پھر دہشتگردوں نے نشانہ بنایا گیا ، خودکش حملہ آور نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھکے قریب ایک ہوٹل کے باہر خود کو دھما کے سے اڑا دیا۔ زور دار دھماکے سے علاقے میں بھگدڑ مچ گئی اور خوف و ہراس پھیل گیا۔ خودکش حملے میں دو پولیس افسران سمیت پانچ افراد شہید ، جبکہ 3 خوا تین سمیت 27 افرا د زخمی ہو ئے جن میں سے 4کی حا لت نا زک بتا ئی جا تی ہے ،اید ھی ایمبولنس سمیت د یگر امدا د ی ٹیمو ں نے زخمیو ں اور نعشو ں کو مختلف ہسپتا لو ں میں منتقل کیا گیا ۔ ذرائع کے مطابق دھماکے سے قبل ایک شخص کو دوڑتے ہوئے دیکھا گیا۔ ریسکیو ٹیمیں ،پولیس کی نفری ، سکیورٹی اداروں کے اہلکار ، کوئیک ریسپانس فورس طور پر موقع پر پہنچ گئیں جبکہ پولیس کی اعلیٰ قیادت بھی جائے وقوعہ پر پہنچ گئی۔ذرا ئع کے مطا بق خود کش حملہ آور کا ہد ف ڈا ن با سکو سکو ل تھا جس میں چھٹی کا وقت 1 بجکر20 منٹ تھا اور حملہ 12 بجکر 36 منٹ پر ہو ا۔ ذرا ئع کا کہنا ہے کہ سکو ل انتظا میہ کو چند ہفتو ں قبل نا معلوم افرا د کی جا نب سے د ھمکی آمیز خط بھی ملا تھا ۔آئی جی پنجاب کے مطابق حملہ آور کا ہدف پولیس لائنز تھی لیکن وہاں داخل نہ ہوسکا تو خود کو مارکیٹ میں دھماکے سے اڑالیا۔ سی سی پی او لاہور کا کہنا ہے کہ قلعہ گجر سنگھ پولیس لائنزکے باہر ہونے والا دھماکا خودکش حملہ تھا ،حملہ آور پولیس لائنز میں داخل ہونا چاہتا تھا لیکن ناکامی پر اْس نے خود کو باہر ہی دھماکے سے اڑالیا۔ سی سی پی او کے مطابق حملہ آور کی عمر 22 سے 25 سال کے درمیان تھی۔ جائے وقوعہ سے اس کے جسم کے ٹکڑے ملے ہیں۔ دھماکا اتنا زور دار تھا کہ عمارتوں کے شیشے ٹوٹ گئے، قریب کھڑی کئی گاڑیوں میں آگ لگ گئی اور موٹر سائیکلوں کو بھی نقصان پہنچا۔صوبائی وزیرداخلہ نے دھماکے میں 5 افراد کے جاں بحق ہونے کی تصدیق کی ہے جن میں سب انسپکٹر یو سف ،کا نسٹیبل وقار ،محمد علی ،اور محمد اقبال اور ایک نا معلوم شخص ہے ۔ لاشوں اور زخمیوں کو میو ہسپتال ، گنگا رام ہسپتا ل اور سروسز ہسپتا ل منتقل کیا گیا ۔گنگا را م ہسپتا ل سہیل ، مکھا مسیح ، وقاص فر زا نہ ، ر یا ض ، قیصر ، مجا ہد ، شبا نہ، زا ہد سرو سز ہسپتا ل میں عامر ،فہد ، انو ر بی بی اور اطہر۔ میو ہسپتا گیا رہ ز خمیو ں کو لا یا گیا ایک شخص نو اشر یف ہسپتا ل میں زیر علا ج ہے ۔ ترجمان پنجاب پولیس کے مطابق دھماکے میں اے ایس ائی وقار احمد بھی جاں بحق ہوا۔ زخمیوں میں دو خواتین کانسٹیبل اور ایک بچہ بھی شامل ہے۔ ایم ایس میو ہسپتا ل کا کہنا ہے کہ ہسپتا ل میں 7 زخمی لائے گئے ہیں جن کی حالت خطرے سے باہر ہے۔ پولیس اور سیکیورٹی اداروں کے اہل کاروں نے علاقے کو گھیرے میں لے کر دھماکے کی جگہ کے اردگرد خاردار تاریں لگا کر تحقیقات شروع کردیں ہیں۔

لاہور (وقائع نگا ر خصو صی ،کرا ئم سیل) وزیر اعلیٰ پنجاب محمدشہباز شریف نے پولیس لائنز قلعہ گجر سنگھ کے باہرخودکش دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے آئی جی پولیس سے رپورٹ طلب کر لی ہے۔ وزیر اعلیٰ نے دھماکے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہارکیاہے۔وزیر اعلیٰ نے ہدایت کی ہے کہ زخمی افراد کو علاج معالجہ کی ہر ممکن سہولتیں فراہم کی جائیں۔وزیراعلیٰ نے پولیس لائنز کے باہر دھماکے میں جاں بحق ہونے والوں کے ورثاء کیلئے پانچ پانچ لاکھ روپے مالی امداد کا اعلان کیاہے جبکہ شدید زخمی ہونے والوں کو 75ہزار روپے اور معمولی زخمیوں کو 25ہزا ر روپے مالی امداد دی جائے گی ۔انہوں نے کہا کہ حکومت پنجاب دھماکے میں جاں بحق ہونے والوں کے ورثاء کے غم میں برابر کی شریک ہے اورزخمیوں کو بہترین طبی سہولتوں کی فراہمی کو یقینی بنایا جا رہا ہے ۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ سفاک درندوں کی بزدلانہ کارروائیاں دہشتگردی کیخلاف جنگ میں قوم کا پختہ عزم متزلزل نہیں کرسکتیں ۔قوم کے اتحاد اور اتفاق سے دہشت گردی کے ناسور کا خاتمہ کریں گے۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردوں کو ان کی زبان میں سخت ترین جواب دینے کا وقت آگیا ہے ۔ معصوم لوگوں کو نشانہ بنانے والے دہشت گردمسلمان تو کیا انسان کہلانے کے بھی حقدار نہیں۔ پاک دھرتی سے دہشت گردوں اورانتہاء پسندوں کے ناپاک وجودکا ہمیشہ ہمیشہ کیلئے صفایا کریں گے۔

مزید : صفحہ اول


loading...