لاہور ہائی کورٹ نے ایف بی آر کو واپڈا سے 6ارب روپے وصول کرنے سے روک دیا۔

لاہور ہائی کورٹ نے ایف بی آر کو واپڈا سے 6ارب روپے وصول کرنے سے روک دیا۔
لاہور ہائی کورٹ نے ایف بی آر کو واپڈا سے 6ارب روپے وصول کرنے سے روک دیا۔

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے فیڈرل بورڈ آف ریونیو کو واپڈا سے جنرل سیلز ٹیکس کی مد میں6 ارب روپے وصول کرنے سے روکتے ہوئے ایف بی آر کو ڈیڑھ ماہ میں تنازع حل کرنے کا حکم دے دیا۔مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے یہ حکم واپڈا کی طرف سے دائردرخواست نمٹاتے ہوئے جاری کیا ،درخواست گزار کے وکیل میاں عاشق حسین نے موقف اختیار کیا کہ فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے واپڈا کو 6 ارب روپے کے جنرل سیلز ٹیکس کا نوٹس بھجوایا ہے جو غیرقانونی ہے، انہوںنے مزید موقف اختیار کیا کہ بجلی کی تقسیم کار کمپنیاں پہلے ہی ایف بی آر کو سترہ فیصد سیلز ٹیکس ادا کررہی ہیں ہے اور اگر واپڈا نے بھی سیلز ٹیکس کی مد میں رقم دے دی تو ایف بی آر کی طرف دوگناسیلز ٹیکس چلا جائے گا اور اس کا اضافی بوجھ بجلی صارفین پر پڑے گا ،ایف بھی آر کی طرف سے بھجوایا گیا نوٹس کالعدم کیا جائے، سماعت کے بعد عدالت نے واپڈا سے 6 ارب روپے سیلز ٹیکس کی وصولی روکتے ہوئے ایف بی آر کو ہدایت کی کہ اس تنازع پر ڈیڑھ ماہ میں فیصلہ کیا جائے اوراس دوران عدالت عالیہ کا حکم امتناعی موثر رہے گا۔

مزید : لاہور