ائیرپورٹ پر تیل ڈلوانے کے دوران جہاز سے خون بہنے لگا، تلاشی لی گئی تو دو ایسی چیزیں برآمد کہ افراتفری پھیل گئی

ائیرپورٹ پر تیل ڈلوانے کے دوران جہاز سے خون بہنے لگا، تلاشی لی گئی تو دو ایسی ...
ائیرپورٹ پر تیل ڈلوانے کے دوران جہاز سے خون بہنے لگا، تلاشی لی گئی تو دو ایسی چیزیں برآمد کہ افراتفری پھیل گئی

  

ہرارے (نیوز ڈیسک) گزشتہ روز ایک امریکی ائیرلائن کا طیارہ جرمنی سے جنوبی افریقہ کی پرواز کے دوران ایندھن لینے کے لئے زمبابوے کے ایک ائرپورٹ پر اترا تو اس سے ایسی چیزیں برآمد ہو گئیں کہ جنہیں دیکھ کر سکیورٹی اہلکاروں کے بھی رونگٹے کھڑے ہو گئے۔

جریدے ”دی ہیرلڈ“ کا کہنا ہے کہ یہ کارگو طیارہ امریکی کمپنی ویسٹرن گلوبل ائیرلائنز کی ملکیت ہے اور یہ جرمنی سے جنوبی افریقہ کے لئے روانہ ہوا تھا، لیکن پائلٹ نے ری فیولنگ اور بعض دیگر ضروریات کی بناے پر زمبابوے میں لینڈنگ کی درخواست کی تھی۔ اس سے پہلے اسی طیارے کی موزنبیق میں لینڈنگ کی درخواست رد کی گئی تھی، جس کے بعد پائلٹ نے زمبابوے کا رخ کیا۔

مزید جانئے: دنیا میں سیرین ائیر کے بعد پی آئی اے میں ملازمین کا تناسب سب سے زیادہ ہے

ہرارے ائیرپورٹ پر جب زمینی عملہ طیارے میں ایندھن بھرنے کا کام کررہا تھا تو اس میں سے خون ٹپکتا دیکھ کر سب ٹھٹھک گئے۔ یہ منظر دیکھ کر طیارے کی تلاشی کا فیصلہ کیا گیا۔ مقامی میڈیا کے مطابق جب طیارے کا معائنہ کیا گیا تو معلوم ہوا کہ اس کے اندر موجود ایک لاش سے خون بہہ رہا تھا۔ مزید تلاشی کے دوران جنوبی افریقہ کے لاکھوں کرنسی نوٹ بھی برآمد ہوئے۔ طیارے کو زمبابوے کی سکیورٹی ایجنسیوں نے اپنی تحویل میں لے لیا جبکہ عملے کو بھی نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا ہے۔ غیر مصدقہ اطلاعات کے مطابق عملے کے چار افراد میں سے دو کا تعلق امریکا سے ، ایک کا پاکستان سے، جبکہ ایک کا جنوبی افریقہ سے بتایا گیا ہے۔

مقامی میڈیا کا کہنا ہے کہ طیارے میں لہو لہان لاش کی موجودگی کا معمہ تاحال حل نہیں ہوسکتا اور نہ ہی لاش کی شناخت کے بارے میںا بھی کچھ معلوم ہے۔ زمبابوے کی ایجنسیاں معاملے کی تحقیقات کررہی ہیں اور اس سلسلے میں بیرونی ایجنسیوں سے بھی رابطہ کرلیا گیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس