انٹرنیشنل کرکٹ کوئٹہ کی ڈومیسٹک کرکٹ سے آسان کیوں ہے ، کوئٹہ گلیڈیئٹر کے بسم اللہ خان نے حیران کن وجہ بتا دی

انٹرنیشنل کرکٹ کوئٹہ کی ڈومیسٹک کرکٹ سے آسان کیوں ہے ، کوئٹہ گلیڈیئٹر کے بسم ...
انٹرنیشنل کرکٹ کوئٹہ کی ڈومیسٹک کرکٹ سے آسان کیوں ہے ، کوئٹہ گلیڈیئٹر کے بسم اللہ خان نے حیران کن وجہ بتا دی

  

دبئی (مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان سپر لیگ میں کوئٹہ گلیڈیئٹر کی جانب سے ڈبیو میچ میں شاندار پرفارمنس دینے والے بلے باز بسم اللہ خان نے کہا ہے کہ انٹر نیشنل کرکٹ ڈومیسٹک کرکٹ سے زیادہ آسان ہے لیکن صرف یہاں پریشر زیادہ ہوتا ہے،میں نے اس پریشر پر قابو پایا جس کی وجہ سے اچھا کھیل پیش کرنے میں کامیاب ہوا ۔

نجی نیوز چینل جیو نیوز کے پروگرام ”آج شہازیب خانزادہ کے ساتھ“میں گفتگو کرتے ہوئے بسم اللہ خا ن نے کہا کہ گزشتہ روز لاہور قلندر کےخلاف اپنی پہلی اننگز پر اللہ کا شکر ادا کرتا ہوں جس نے اس عزت سے نوازا ۔انہوں نے کہا کہ مجھ پر ٹیم منجمنٹ ،معین خان اور سرفراز نواز نے اعتماد کا اظہار کیا جس پر ان کا مشکور ہوں ۔پوری ٹیم منجمنٹ نے اعتماد دیا جس کی وجہ سے ایسی پرفارمنس ممکن ہو سکی ۔انہوں نے کہا کہ کوئٹہ گلیڈیئٹر یکجا ہو کر کھیل رہی ہے ،سینئر کھلاڑی جونیئرز کو ساتھ لے کر چل رہے ہیں جس کے وجہ سے ٹیم کی مجموعی پرفارمنس اب تک سب سے زیادہ بہتر ہے ۔انہوں نے کہا کہ مجھے ٹیم منجمنٹ نے موقع دیا تو انہیں پرفارم کر کے دکھا دیا ہے اب ٹیم منجمنٹ پر انحصار کرتا ہے ،اگر انہیں لگتا ہے کہ ٹیم میں میر ی موجودگی ٹیم کے لیے بہتر ہے تو میں بھی کھیلنے کے لیے تیار ہوں ۔ان کا کہنا تھا کہ لاہور قلندرز کے خلاف پرفارمنس کے بعد اپنے والدین سے بات کی جو بہت ہی خوش تھے اور انہوں نے میرے لیے دعائیں کیں ۔ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ کوئٹہ کی ڈومیسٹک کرکٹ مشکل ہے کیو نکہ وہاں پر پچیں غیر ہموار ہوتی ہیں جن پر کھیلنا قدریں مشکل ہے جبکہ یہاں کی پچیں انٹرنیشنل سطح پر بنائی گئی ہیں جن پر کھیلنا آسان ہوتا ہے لیکن انٹر نیشنل کرکٹ میں تماشائیوں اور گراﺅنڈ میں موجود بڑے بڑے ناموں کا پریشر ہوتا ہے ،میں نے اس پریشر پر قابو پایا جس کی وجہ سے عمدہ پرفارمنس دینے میں کامیاب رہا۔انہوں نے مزید کہا میں پاکستان کے لیے تینوں فارمیٹ میں عمدہ کھیل پیش کر کے ملک کا نام روشن کرنا چاہتا ہوں ۔واضح رہے کہ بسم اللہ خان نے کل کوئٹہ گلیڈیئٹر کی جانب سے ڈیبیو میچ میں لاہور قلندر ز کے خلاف انتہائی پریشر میچ میں 30گیندوں پر 55بنا کر مین آف دی میچ حاصل کیا تھا ۔

مزید : T20