غیرت کے نام پر؟

غیرت کے نام پر؟

وزیراعظم نوازشریف نے سچ کہا کہ دین متین میں غیرت کے نام پر قتل کی کوئی گنجائش ہی نہیں ہے اور ہم ملک میں اس قبیح فعل کو ختم کرکے چھوڑیں گی۔ وزیراعظم نے یہ بات پروڈیوسر شرمین عبید کی آسکر ایوارڈ کے لئے نامزد فلم کی حوالے سے بات کرتے ہوئے کہی، شرمین نے ایوان وزیراعظم میں ان سے ملاقات کی تھی، وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ حضور اکرمؐ نے دُنیا میں سماجی انقلاب برپا کیا۔ ہم آپؐ کے پیروکار ہیں اور آپؐ کی تعلیمات کے مطابق خواتین کو معاشرے میں ان کا صحیح مقام دیں گے۔ وزیراعظم نے اس سلسلے میں حکومتی اقدامات کا بھی یقین دلایا۔بلاشبہ وزیراعظم محمد نوازشریف نے درست کہا ہمارے ملک میں خواتین کو وہ حیثیت اور مقام نہیں دیا جاتا جو ان کا حق ہے اور پھر غیرت کا نام لے کر انسانی قتل بھی ایک رواج کی حیثیت اختیار کر چکا ہے۔ ایسا نہیں ہونا چاہئے ، بہرحال اس سلسلے میں اقدامات بھی ضروری ہیں اور اگر قوانین میں کوئی خامی ہے تو اسے بھی دور کرنا چاہئے تاکہ زندگی کا سفر درست ہو۔

مزید : اداریہ