حکمرانوں کانیب کوآسیب سمجھنااورڈرنا فطری امر ہے،چودھری الطاف شاہد

حکمرانوں کانیب کوآسیب سمجھنااورڈرنا فطری امر ہے،چودھری الطاف شاہد

لاہور (نمائندہ خصوصی )آل پاکستان مسلم لیگ برطانیہ کے مرکزی چیف ایڈوائزر چودھری محمدالطاف شاہد نے کہا ہے کہ حکمرانوں کانیب کوآسیب سمجھنااورڈرنا فطری امر ہے ۔ پنجاب اورسندھ کے قومی لٹیرے احتساب کے ڈر سے نیب کیخلاف متحد ہوئے ۔ وفاقی حکومت نیب کا راستہ روکنے کیلئے دیوار نہ بنے۔میاں نوازشریف کاآمرانہ لہجے میں چیئرمین نیب کوانتباہ شرمناک اورتشویشناک ہے۔حکمران فرینڈلی اپوزیشن کی ملی بھگت سے نیب کوبھی اپناسہولت کاربنانے کے درپے ہیں۔ وہ اے پی ایم ایل یوتھ ونگ کے ورکرز کنونشن سے خطاب کررہے تھے ۔ چودھری محمدالطاف شاہد نے مزید کہا کہ نیب حکام نے پنجاب میں کرپشن کیخلاف آپریشن کیلئے اپنا قدم اٹھایاتوحکمرانوں کی نام نہاد شرافت پرسے نقاب اٹھ گیا۔نیب کیلئے لٹیروں کاخبث باطن کسی سے چھپ نہیں سکتا ۔انہوں نے کہا کہ میاں نوازشریف جمہوریت کی آغوش میں بیٹھ کرآمرانہ اندازسے فیصلے کررہے ہیں۔ ماضی میں سنگین غلطیوں کی بھاری قیمت چکانے کے باوجودحکمرانوں کوآج بھی اپنے پاؤں پرکلہاڑی مارنے کی عادت ہے۔انہوں نے کہا کہ ماضی میں بھی ایک بار میاں نوازشریف کے فرمانِ شاہی پرفیصل آباد کے دو سرکاری آفیسرز کوکھڑے کھڑے ہتھکڑیاں لگا دی گئی تھیں مگر جس وقت خودانہیں زندانوں میں جاناپڑاتو موصوف نے ان سے معذرت کرتے رہے۔جولوگ اپنے ماضی کی غلطیوں سے کچھ نہیں سیکھتے مستقبل میں کوئی بڑی مصیبت ان کامقدربن جاتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں دھرنااورحکمرانوں کاروناایک ساتھ جاری تھا مگر دھرناختم ہو نے سے حکمرانوں کے غرورکاگراف مزید بلندہوگیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان ایک آزاد ریاست ہے ،اسے اتفاق فاؤنڈری کی طرح نہیں چلایاجاسکتا۔

مزید : میٹروپولیٹن 1