ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کے گھر پر نامعلوم افراد کے حملے کی مذمت کرتے ہیں،غلام عباس

ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کے گھر پر نامعلوم افراد کے حملے کی مذمت کرتے ہیں،غلام عباس

لاہور( اپنے نامہ نگار سے ) ڈاکٹر فوزیہ صدیقی کے گھر پر نامعلوم افراد کی طرف سے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں حکومت عافیہ فیملی کو تحفظ دے،اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے قائدین غلام عباس صدیقی ،شاہد نذیر،عبدالغفار،ذکی الدین،محمد عدنان نے عافیہ صدیقی کی بہن فوزیہ صدیقی کے گھر پر نامعلوم افراد کی طرف سے حملے چوکیدار کو تشدد کا نشانا بنانے اور عافیہ صدیقی کے بچوں کے اغوا کی ناکام کوشش پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا ہے کہ عافیہ صدیقی کو اغواء کرنے والی طاقت اب بھی عافیہ صدیقی کے بچوں کو اغوا کرنا چاہتی ہے جس کا بین ثبوت ڈاکٹرفوزیہ کے گھر پر حملے اور بچوں کے بارے میں استفسار ہے عافیہ فیملی اس وقت بھی غیر محفوظ اورذہنی دباؤ کا شکار ہے عافیہ فیملی کو ہراساں کرنے والے عناصر کی نشاندہی کرکے عبرت ناک سزا دی جائے انہوں نے کہا کہ حکومت عافیہ صدیقی کو رہا کروانے کی بجائے عافیہ فیملی کو تحفظ دینے میں بھی ناکام ہوگئی ہے حکومت بتائے کہ پاکستان کے شہرکراچی میں مقیم عافیہ فیملی شرپسندوں کے حملوں سے محفوظ کیوں نہیں ؟اسلامی تحریک طلبہ پاکستان کے قائدین نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ عافیہ کی رہائی ،عافیہ کے بچوں کا تحفظ یقینی بنانے کیلئے عملی اقدام کئے جائیں ۔اگر حکومت ایسا نہ کرسکی تو قوم سمجھے گی کہ حکومت عام عوام کا تحفظ کرنے میں ناکام ہوگئی ہے انہوں نے مزید کہا کہ حکومت عافیہ صدیقی کے ساتھ ان کی فیملی کا رابطہ بھی بحال کروائے۔ اسلامی تحریک طلبہ کے قائدین نے پنجاب یونیورسٹی میں طلبہ گروپس میں تصادم اور لاہور میں پولیوورکر پر حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے مجرموں کے خلاف تادیبی کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1