5سال قبل بری ہونے والے قتل کے مجرم کو عمر قید کی سزا

5سال قبل بری ہونے والے قتل کے مجرم کو عمر قید کی سزا

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہورہائیکورٹ نے ماتحت عدالت سے 5سال قبل بری ہونے والے قتل کے مجرم کو عمر قید کی سزا سناتے ہوئے اس کی بریت کے خلاف دائر اپیل منظور کرلی ۔فیصلے کے بعد مجرم قیصر محمودکو کمرہ عدالت سے ہی گرفتار کر لیا گیا۔جسٹس سیدمظاہرعلی اکبرنقوی کی سربراہی میں 2رکنی بنچ نے مقدمہ قتل کے مدعی سرائے عالمگیر ضلع گجرات کے فضل حق کی اپیل پرسماعت کی۔ عدالت میں ڈپٹی پراسیکیوٹرجنرل نثاراحمدورک نے ملزم قیصرمحمود کی بریت کے خلاف دلائل دیتے ہوئے کہاکہ29اکتوبر2010ء کو تھانہ سرائے عالمگیر گجرات نے مدعی فضل حق کی درخواست پراس کے بھتیجے عمردرازکوقتل کے الزام میں قیصرمحمودکے خلاف مقدمہ درج کیا۔ قتل کا وقوعہ دن کاتھا جس میں چشم دید گواہوں کے بیانات، میڈیکل اورسائنس فرانزنک لیبارٹری رپورٹس سمیت تمام شواہدسے ملزم قصوروارثابت ہوتا ہے۔ اس کے باوجود ایڈیشنل سیشن جج سرائے عالمگیرنے یکم اگست 2011ء کوملزم کوبری کردیا۔ انہوں نے استدعا کی کہ ملزم کی بریت کے فیصلے کوکالعدم کرکے اسے سزاسنائی جائے۔ ملزم کے وکیل نے موقف اختیارکیا کہ ملزم کے خلاف بے بنیاد مقدمہ درج کروایا گیا۔ مقتول کا بروقت پوسٹمارٹم بھی نہیں ہوا، ٹرائل کورٹ نے ناکافی شواہد کی بناء پرملزم کو بری کیا۔عدالت نے فریقین کے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد مدعی کی بریت کے خلاف دائراپیل منظور کرتے ہوئے قیصرمحمود کو عمرقید کا حکم سنادیا جس کے بعد پولیس نے اسے گرفتار کرلیا۔

مزید : صفحہ آخر