کیا حکومت اورنج ٹرین چلانے کیلئے یتیموں سے تعلیم کا حق چھیننا چاہتی ہے؟ لاہور ہائیکورٹ

کیا حکومت اورنج ٹرین چلانے کیلئے یتیموں سے تعلیم کا حق چھیننا چاہتی ہے؟ ...

لاہور(نامہ نگارخصوصی )لاہور ہائیکورٹ نے اورنج ٹرین منصوبے کے لئے انجمن حمایت اسلام سکول اور کالج کی عمارت کومسمارکرنے سے روکتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ کیا حکومت ٹرین چلانے کے لئے یتیموں سے تعلیم کا حق بھی چھیننا چاہتی ہے؟جسٹس عابد عزیز شیخ کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے انجمن حمایت اسلام سکول و کالج کی درخواست پر سماعت کی،د رخواست گزار کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ حکومت نے ملتان روڈ پر اورنج ٹرین منصوبے کا ڈیزائن تبدیل کرتے ہوئے یتم خانہ چوک پر اسٹیشن بنانے کا فیصلہ کیا ہے اور اب یتیم خانہ چوک پر اورنج ٹرین کا اسٹیشن بنایا جا رہا ہے جس کے لئے انجمن حمایت اسلام سکول اور کالج کی عمارت کو مسمار کر کے جگہ حاصل کی جا رہی ہے اور اس کیلئے نوٹیفکیشن بھی جاری کر دیا گیا ہے، انہوں نے مزید موقف اختیار کیا کہ سکول اور کالج میں ہزاروں یتیم بچے اور بچیاں مفت تعلیم حاصل کرتے ہیں، اگر عمارت مسمار کی گئی تو کئی طلبا و طالبات متاثر ہوں گے ، لہذا انجمن حمایت اسلام سکول و کالج کی عمارت مسمار کرنے سے روکا جائے، ابتدائی سماعت کے بعد عدالت نے انجمن حمایت اسلام سکول اور کالج کی عمارت مسمار کرنے سے روکتے ہوئے 22فروری کو ایل ڈی اے اور پنجاب حکومت سے تفصیلی جواب طلب کر لیا، دوران کارروائی عدالت نے ریمارکس دیئے کہ کیا حکومت ٹرین چلانے کے لئے یتیموں سے تعلیم کا حق بھی چھیننا چاہتی ہے۔

مزید : صفحہ آخر