وکلاء کے مسائل کو حل کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیں گے: ارشد جہانگیر جھوجہ

وکلاء کے مسائل کو حل کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیں گے: ارشد جہانگیر جھوجہ

لاہور(کامران مغل /عکاسی ذیشان منیر)صدر لاہور بار ایسوسی ایشن ارشد جہانگیر جھوجہ نے کہا ہے کہ کالے کوٹ کی عزت وتکریم پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہوسکتا، وکلاء کے مسائل کو حل کرنے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھیں گے ،بے جا ہڑتالوں کے حق میں نہیں ہوں کیونکہ ہڑتالیں مسائل کا حل نہیں بلکہ مسائل کا حل صرف مذکرات میں ہی ہوتاہے ،نوجوان وکلاء اور خصوصی طور پر خواتین وکلاء کے مسائل ان کی اولین ترجیحات میں شامل ہیں ۔وکلاء کے بچوں کے لئے ایل جی ایس کے معیار کا سکول بنانے کے لئے کوشاں ہیں جبکہ خواتین وکلاء کے لئے خصوصی طور بار روم بنانے کا عزم کررکھا ہے ،حق دارنوجوان وکلاء کے لئے فنڈز مختص کرنے کے اقدامات بھی کئے جارہے ہیں ۔روزنامہ "پاکستان "سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ارشد جہانگیر جھوجہ نے کہا کہ الیکشن میں کامیابی پر وکلاء کا تہہ دل سے مشکور ہوں ،انہوں نے کہا کہ جیتنے کے بعد سب سے پہلے حمزہ شہباز شریف سے ملاقات کی اور حکومت پنجاب کو وکلاء کو درپیش مسائل سے آگاہ کیا ،وہ حکومت سے لاہوربارکے لئے گرانٹ حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ وکلاء کی کالونی کے لئے بھی مذاکرات کریں گے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ وہ زیر تعمیر وکلاء ہسپتال کو مکمل کرنے کے لئے منصوبہ بندی کر رہے ہیں جس کے لئے درکار فنڈز کے حوالے سے مختلف اداروں سے بات چیت جاری ہے ،انہوں نے کہا کہ وکلاء ہسپتال کی تعمیر ان کاایک د رینہ خواب ہے جس کے لئے ہمارے گروپ سے ہی کامیاب ہونے والے صدر لاہور بار شہزاد حسن شیخ نے اپنی مخلصانہ کوششوں سے وقافی حکومت سے یہ جگہ حاصل کی تھی ،اب ہم اسے مکمل کرنے کے لئے پر عزم ہیں اور ہماری کوشش ہے کہ اسے جلد از جلد مکمل کر لیا جائے۔ارشد جہانگیر جھوجہ نے کہا کہ ہم بار اور بنچ میں انتہائی خوشگوار ماحول کے خواہاں ہیں جبکہ ہمیں سائلین کے مسائل کا بھی اتنا ہی خیال ہے جتنا کہ ہم اپنے لئے سوچتے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ سائل ہی وکیل کی روزی کا وسیلہ ہے اور اس کے لئے ہم آسانی پیدا کرنے کے لئے اپنی تمام تر صلاحیتیں بروئے کار لائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ وکیل عدالت کی معاونت کرتا ہے اور اس طرح بار اور بنچ کے باہمی تعاون سے ہی لوگوں کو حقیقی انصاف مہیا ہو سکتا ہے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ہم بے جا ہڑتالوں کے قائل نہیں کیونکہ ہڑتالیں مسائل کا حل نہیں بلکہ مسائل کا حل صرف اور صرف مذکرات میں ہی ہوتا ہے اور ہماری کوشش ہوگی کہ ہم بلا وجہ کوئی ہڑتال نہ کریں کیونکہ ہڑتال سے زیر سماعت مقدمات التوا کا شکار ہوتے ہیں جس سے روز بروز عدالتوں پر مقدمات کا بوجھ بڑھتا ہے اور سائلین بھی مشکلات کا شکار ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ عدالتوں اور جوڈیشل افسران کی عزت کرنا ہمارا فرض ہے اور ہم چاہیں گے کہ عدالتیں بھی وکلاء کو ویسی ہی عزت دیں کیوں کہ وکیل اور عدالتیں دونوں ایک دوسرے کے لئے لازم وملزوم ہیں ،انہوں نے مزید کہا کہ وہ وکلاء کے بچوں کے لئے ایل جی ایس کے معیار کا سکول بنانے کا ارادہ کئے ہوئے ہیں اور اس سلسلے میں مختلف اداروں سے بات چیت کررہے ہیں ،انہوں نے کہا کہ ہمارے علم ہیں ہے کہ نئے آنے والے نوجوان وکلاء کو کن کن مسائل سے دوچار ہونا پڑتا ہے ہم اس لئے ایک لائحہ عمل تیار کر ہے ہیں جس کے تحت حق داروکلاء کے لئے فنڈ ز مختص کرنے کا عزم کررکھا ہے ،انہوں نے کہا کہ ہم خواتین وکلاء کے مسائل سے بھی بے خبر نہیں تاہم خواتین وکلاء کے لئے بھی ہم علیحدہ بار روم بنانے کے لئے کوشاں ہیں ،ہماری کوشش ہوگی کہ وکلاء کو درپیش تمام مسائل کوجلد ازاجلدحل کیا جائے۔

مزید : صفحہ آخر