” 65 فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل سب کو سرکاری نوکری نہیں مل سکتی“: قائمہ کمیٹی میں انکشاف

” 65 فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل سب کو سرکاری نوکری نہیں مل سکتی“: قائمہ ...
” 65 فیصد آبادی نوجوانوں پر مشتمل سب کو سرکاری نوکری نہیں مل سکتی“: قائمہ کمیٹی میں انکشاف

  

اسلام آباد (آن لائن) سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے وفاقی تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت میں انکشاف کیا گیا ہے کہ ملک کی 20 کروڑ آبادی 65 فیصد نوجوانوں پر مشتمل ہے جو تقریباً 8 کروڑ کے قریب ہے سب کو سرکاری نوکری فراہم نہیں کی جاسکتی جس کی وجہ سے بے روزگاری اور غربت بہت زیادہ ہے۔ وکیشنل اینڈ ٹیکنکل تعلیم کو فروغ دیکر نہ صرف غربت، بیروزگاری و انتہا پسندی کوکنٹرول کیا جاسکتا ہے بلکہ ملک وقوم کی تقدیر بدلی جا سکتی ہے۔ اب تک صدر کی ایک سکیم کے تحت 37 ہزار500 اور 2006 سے وزیراعظم کی ہنر مند پاکستان سکیم کے تحت 1 لاکھ19 ہزار اور وزیراعظم یوتھ سکلڈ ڈویلپمنٹ فیز ون کے تحت 25 ہزار تربیت حاصل کر چکے ہیں 25 ہزار فیز ٹو میں تربیت حاصل کر رہے ہیں۔ کمیٹی کا اجلاس چیئرپرسن سینیٹر راحیلہ مگسی کی زیر صدارت ہوا جس میں سینیٹر محمد جاوید عباسی، گل بسرا، مشاہد اللہ خان، سحر کامران، نعمان وزیر خٹک اور محمد اعظم خان سواتی کے علاوہ سیکرٹری برائے وفاقی تعلیم و پیشہ وارانہ تربیت حسن اقبال ، چیئرمین ایچ ای سی مختار احمد، ایگزیکٹو ڈائریکٹر نیوٹیک ذوالفقار چیمہ اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ واجد علی خان کی عوامی عرضداشت کے حوالے سے چیئرمین ایچ ای سی نے بتایا کہ سینیٹ کی قائمہ کمیٹی کی سفارشات کے مطابق عمل درآمد کر لیا گیا ہے۔نیشنل ٹیکنالوجی کونسل قائم کر دی گئی ہے۔فنڈز فراہم کیے جارہے ہیں ممبر شپ مکمل ہو چکی ہے۔

مزید : اسلام آباد