’5ہزار چینی دہشتگرد ہمارے ملک میں پہنچ گئے ہیں تاکہ۔۔۔‘ بڑے عرب ملک نے ایسا اعلان کردیا کہ پوری دنیا کو حیران پریشان کردیا

’5ہزار چینی دہشتگرد ہمارے ملک میں پہنچ گئے ہیں تاکہ۔۔۔‘ بڑے عرب ملک نے ایسا ...
’5ہزار چینی دہشتگرد ہمارے ملک میں پہنچ گئے ہیں تاکہ۔۔۔‘ بڑے عرب ملک نے ایسا اعلان کردیا کہ پوری دنیا کو حیران پریشان کردیا

  


بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک) شام میں جاری جنگ میں حصہ لینے کے لئے دنیا کے کئی ممالک سے شدت پسند وہاں پہنچے ہیں، لیکن پہلی بار ایک شامی سفیر نے یہ کہہ کر دنیا کو حیران کر دیا ہے کہ چین سے بھی 5ہزار دہشتگرد شام پہنچ چکے ہیں اور وہاں کی شدت پسند تنظیموں کے ساتھ مل کر لڑرہے ہیں۔

ویب سائٹ ایران فرنٹ پیج کی ایک رپورٹ کے مطابق شامی سفیر عماد مصطفی نے یہ بات جریدے سپوتنک سے بات کرتے ہوئے کہی۔ ان کا کہنا تھا کہ شام میں لڑائی شروع ہونے کے بعد چینی خطے سے شام جانے والے شدت پسندوں کی تعدادمیں اضافہ ہوچکا ہے۔ انہوں نے دعوٰی کیا کہ اس وقت 5ہزار جنگجو شام میں برسرپیکار ہیں۔

’اس کے پنجرے کو آگ لگانے سے پہلے اس سے کہا تھا کہ۔۔۔‘ 2 سال قبل اردن کے اس پائلٹ کو جلانے والا داعش کا کارکن منظر عام پر آگیا، ایسا انکشاف کردیا کہ جان کر آپ بھی کانپ اٹھیں

عماد مصطفی کے مطابق یہ تمام دہشت گرد براستہ ترکی شام گئے تھے اور ان میں سے اکثر اپنے خاندانوں کو بھی ساتھ لے گئے تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ انہی دہشتگردوں کی وجہ سے اب شام میں چینی بچے بھی دیکھنے کو ملتے ہیں۔ شامی سفیر کا مزید کہنا تھا کہ ان جنگجوﺅں میں سے تقریباً نصف داعش کے ساتھ ملے ہوئے ہیں جبکہ باقی نصف النصرہ فرنٹ کا حصہ ہیں۔ انہوں نے ترکی کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا ”اب ترکی داعش سے لڑرہا ہے لیکن پچھلے ساڑھے چار سال میں تمام بیرونی دہشتگرد ترکی کے راستے شام پہنچے ہیں۔ یہ ایک افسوسناک حقیقت ہے۔“

مزید : بین الاقوامی


loading...