پنجاب میں بھی رینجرز کا آپریشن شروع کیا جائے، سیاسی رہنما

پنجاب میں بھی رینجرز کا آپریشن شروع کیا جائے، سیاسی رہنما

لاہور(شہزاد ملک ) سیاسی رہنما ؤں نے پنجاب میں دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات پر اپنے ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر پنجاب میں بھی رینجرز کے آپریشن کی ضرورت ہے تو یہاں پر بھی آپریشن شروع کیا جائے لیکن اس سے بھی زیادہ ضرورت اس امر کی ہے کہ پولیس کو ہی با اختیار کیا جائے اور ان کے زریعے سے ہی آپریشن کو تیز کیا جائے اور ٹارگٹیڈ آپریشن کیا جائے ملک سے دہشت گردی کے مکمل خاتمے کے لئے ہم سیاسی نظریاتی اختلافات کو بالائے طاق رکھ کر ایک ہیں ۔اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے پی ٹی آئی کے اپوزیشن لیڈر میاں محمود الرشید اور اعجاز چودھری کا کہنا تھا کہ ہم تو شروع دن سے ہی یہ مطالبہ کررہے ہیں کہ اگر سندھ یا کراچی میں رینجرز آپریشن کر سکتی ہے تو پھر پنجاب میں کیون نہیں لیکن پنجاب کے حکمران اس کے سب سے بڑے مخالف ہیں ان کے اس مائیڈ سیٹ کو تبدیل کرنے کی ضرورت ہے اور اس جماعت کے اندر جو کسی بھی روپ میں نرم گوشہ رکھنے و الے بیٹھے ہیں ان کے اس مخصوص مائینڈ سیٹ کو بدلنے کی ضرورت ہے اور بلا تفریق پورے پنجاب میں آپریشن ہونا چاہئے پی ٹی آئی دہشت گردی کے خاتمے کے لئے حکومت کی ہر سطح پر سیاسی نظریاتی اختلافات کو ایک طرف رکھ کر مدد کرنے کو تیار ہے لیکن حکومت کو عملی اقدامات اٹھانا ہوں گے۔پاکستان پیپلز پارٹی کے مرکزی سیکرٹری اطلاعات چودھری منظور کا کہنا تھا کہ ہم براہ راست یہ مطالبہ نہیں کرتے کہ پنجاب میں رینجرز کے زریعے آپریشن شروع کیا جائے تاہم ہمارا یہ مطالبہ ہے کہ پولیس کو ہی با اختیار کیا جائے اور ان سے یہ کام کروایا جائے پھر بھی انہیں اگر رینجرز کی ضرورت ہو تو پھر ان کی مدد کے لئے انہیں بھی استعمال کیا جائے لیکن ہمارا یہ بھی مطالبہ ہے کہ (ن ) لیگ کے اندر جو سہولت کار بیٹھے ہیں ان کے مائینڈ سیٹ کو تبدیل کیا جائے کیونکہ (ن) لیگ کے اندر بیٹھے لوگ تو پولیس کے آپریشن کے بھی حامی نہیں ہیں اس لئے سب سے پہلے (ن) لیگ کی سوچ کو بد لنے کی ضرورت ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...