پاک افغان بارڈر بند ہونےسے روپے کی قدر میں اضافہ، ڈالر کی قیمت گرگئی

پاک افغان بارڈر بند ہونےسے روپے کی قدر میں اضافہ، ڈالر کی قیمت گرگئی
پاک افغان بارڈر بند ہونےسے روپے کی قدر میں اضافہ، ڈالر کی قیمت گرگئی

  


لاہور (ویب ڈیسک) پاک افغان ابرڈر بند ہوتے ہی ڈالر سمیت تمام غیر ملکی کرنسیوں کے مقابلہ میں روپے کی قدر بڑھ گئی جس کے نتیجہ میں گزشتہ روز اوپن مارکیٹ مین ڈالر 108 روپے سے کم ہوکر یکدم 107 روپے پر آگیا۔ اسی طرح کچرا (کم مالیت والے نوٹ) ڈالر کی قیمت 106.50 روپے رہ گئی۔

ایکسچینج کمپنیز ایسوسی ایشن کے صدر اور صوبائی وزیر تجارت شیخ علاﺅالدین نے بتایا ہے کہ ڈالر کی قدر میں کمی کی وجہ سے افغان بارڈر سیل ہونا ہے کیونکہ پاکستان سے روزانہ بھاری تعداد میں ڈالر افغانستان سمگل ہوتا تھا۔ سمگلر پاکستان کی اوپن مارکیٹ سے ڈالر خرید کر افغانستان پہنچاتے ہیں جن سے افغان تاجر تمام دیگر مماکل سے ان ڈالرز کے ساتھ تجارت کرتے ہیں۔ شیخ علاﺅالدین نے کہا کہ اگر ڈالرز کی سمگلنگ رُک جائے اور وفاقی حکومت اس مقصد کیلئے اقدامات کرے تو پاکستان میں ڈالر 100 سے 102 روپے تک آسکتاہے۔ اسی طرح دیگر ممالک کی کرنسیوں کی قیمت بھی کم ہوسکتی ہے۔

شیخ علاﺅالدین نے بتایا کہ یہ سلسلہ کافی عرصے سے جاری ہے جس کو روکنے کیلئے اقدامات کرنا ہوں گے تاکہ ملک میں ڈالر کی نہ تو قلت پیدا ہو اور نہ ہی قیمت میں اضافہ ہو۔

مزید : لاہور


loading...