کراچی کی بندرگاہ پر درآمدی گاڑیوں کی تعداد 8ہزار سے تجاوز کر گئی

کراچی کی بندرگاہ پر درآمدی گاڑیوں کی تعداد 8ہزار سے تجاوز کر گئی

 لاہور( کامرس رپورٹر)درآمدی گاڑیوں کے لئے نئے قانون کی وجہ سے کئی گاڑیاں پورٹ پر پھس چکی ہیں۔ آل پاکستان موٹر ڈیلرز ایسوسی ایشن نے مطالبہ کیا ہے کہ اقتصادی رابطہ کمیٹی جلد معاملے کو حل کرے۔ذرائع کے مطابق اس وقت پورٹ پر رکی گاڑیوں کی تعداد 8 ہزار سے بھی تجاوز کر چکی ہیں۔ آل پاکستان موٹر ڈیلرز ایسوسی ایشن کے صدر کا کہنا تھا کہ پورٹ پر کھڑی گاڑیوں پر ڈیمرج لگ رہا ہے، اس لئے اقتصادی رابطہ کمیٹی جلد از جلد تمام ان گاڑیوں کی کلیئر کرے۔ گاڑیوں کی کلیئرنس سے حکومت کو 10 سے 12 ارب روپے کی آمدن ہو گی۔دوسری جانب فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان نے بھی حکومت کو تجویز دی ہے کہ گاڑیوں کی قانونی درآمدات کے لئے حکومت کو قانون میں تبدیلی کی ضرورت ہے۔ حکومت کے اس اقدام سے ڈالر کی طلب میں بھی کمی واقع ہو گی۔

مزید : کامرس