60 ٹریڈ اداروں کو 3 ماہ کی ٹریننگ دی جائے گی، وزارت ٹیکسٹائل

60 ٹریڈ اداروں کو 3 ماہ کی ٹریننگ دی جائے گی، وزارت ٹیکسٹائل

فیصل آباد(آن لائن)وزارت ٹیکسٹائل اینڈ انڈسٹری کے جوائنٹ سیکرٹری اعجاز حسین تالپور نے کہا ہے کہ حکومت ٹیکسٹائل صنعت سمیت دیگر60 قسم کی ٹریڈ کے اداروں میں کام کرنے والے محنت کشوں کی تربیت کیلئے ملک کے مختلف شہروں میں ٹریننگ انسٹی ٹیوٹ قائم کررہی ہے اسپر 125کروڑ روپے خرچ ہونگے یہ ٹریننگ 3 ماہ کی ہوگی اور اسمیں حصہ لینے والے ٹرینی کوباقائدہ مناسب ماہانہ دیا جائیگا یہ بات انہوں نے آل پاکستان بیڈ شیٹس اینڈ اپ ہولسٹری مینو فیکچررز ایسوسی ایشن کے سینئر وائس چیئر مین عمران محمودکی جانب سے اپنے اعزاز میں دئے گئے استقبالیہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہی اس موقع پربرآمدی تاجر اور صنعتکار کثیر تعداد میں موجود تھے تقریب سے ،عارف احسان ملک ، تحریک انصاف کی مرکزی پالیسی کونسل آف ٹیکسٹائل کے ہیڈ ممبر ظفر اقبال سرور، شہزاد حسین،مرزا عمر غیاث ،ڈاکٹر ظفر،محمد امین، سیکرٹری افضال اسحق اور دیگر نے خطاب کیا وزارت ٹیکسٹائل اینڈ انڈسٹری کے جوائنٹ سیکرٹری اعجاز حسین تالپور نے برآمدی تاجروں اور صنعتکاروں کو یقین دلایا کہ انکی وزارت ٹیکسٹائل سیکٹر کی ترقی کیلئے کوشاں ہیں انشاء اللہ اسی ہفتے انہیں انکے مسائل کے حل بارے حکومت کی طرف سے خوشخبری ملے گی قبل ازیںAPBUMA کے سینئر وائس چیئر مین عمران محمود نے خطبہ استقبالیہ میں جائنٹ سیکرٹری وزارت ٹیکسٹائل اینڈ انڈسٹریز ٹیکسٹائل اعجاز حسین تالپورکو فیصل آباد میں خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ فیصل آباد ملک کابڑا ٹیکسٹائل حب اور ملک کی سب سے بڑی اندسٹری ٹیکسٹائل ہے۔

جوملکی برآمدات میں62فیصد گرانقدر حصہ ڈال رہی ہے اسکی حوصلہ افزائی اور ملک کی صنعتی و معاشی ترقی کیلئے ایسا تھنک ٹینک بنایاجائے جس میں ٹیکسٹائل سیکٹر کے تمام سٹیک ہولڈرز کو شامل ہوں انہوں نے کہا کہ حکومت کوہماری تجویز ہے کہ وہ صنعتی ترقی کی راہ میں حائل رکاوٹوں کو دور کرنے کیلئے اپنے تمام متعلقہ محکموں میں’’ پروصنعتی کلچر‘‘ کی بنیاد ڈالے عمران محمود نے درآمدی تاجروں اور صنعتکاروں کو در پیش مسائل اورایسوسی ایشن کی جانب سے اسکے حل کیلئے کی جانے والی کاوشوں کا تفصیلی ذکرکرتے ہوئے کہا کہ اسوقت تاجر و صنعتکار ان گنت مسائل کا شکار ہیں ایک طرف مختلف ری فنڈ کی مد میں ٹیکسٹائل برآمد کنند گان اربو ں روپے کے واجبات کی ادائیگی نہ ہونے سے دوسری طرف صنعتی قرضوں پر بھاری مارک اپ کی شرح اور امن وامان کی ناقص سورتحال کا سامنا ہے۔

مزید : کامرس


loading...