سر کھولے بغیر دماغ کے آپریشن میں ترقی یافتہ ممالک سے سبقت لے گئے،پروفیسر خالد محمود

سر کھولے بغیر دماغ کے آپریشن میں ترقی یافتہ ممالک سے سبقت لے گئے،پروفیسر ...

لاہور(سٹی رپورٹر)تین روزہ عالمی نیورو سرجری کانفرنس اختتام پذیر ہو گئی جس میں سات ممالک کے نیوروسرجنز کی موجودگی میں پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائنسز، لاہور جنرل ہسپتال یونٹ II کے پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود نے نوجوان ڈاکٹرز کو اینڈو سکوپی کی تربیت دے کر ایک بار پھر ملک کا نام روشن کر دیا۔بین الاقوامی سطح پر پہچان کے حامل طبی ماہرین بھی پاکستانی نیورو سرجن کے گرویدہ دکھائی دئیے، اور وہ بے ساختہ ان کے کام کی مہارت پر داد دینے پر مجبور ہو گئے ۔ دوران کانفرنس ایک سے زائد مواقع پر پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود نے تحقیقی مقالہ جات پیش کرنے کے علاوہ پیچیدہ کیسوں پر سیر حاصل روشنی ڈالی اور قرار دیا کہ ماضی میں پاکستانی ڈاکٹروں کو تربیت کے لیے بیرون ملک جانا پڑتا تھا اور اب الحمد للہ پاکستان کے ڈاکٹرز دوسرے ملکوں میں جا کر جدید تکنیک کے بارے میں آگاہ کرتے ہیں۔ موجودہ حالات میں نوجوان ڈاکٹروں کو چاہئے کہ وہ جدید تحقیق اور ٹیکنالوجی پر مزید عبور حاصل کر کے ملک و قوم کا نام روشن۔پروفیسر ڈاکٹر خالد محمود نے کہا کہ سر کھولے بغیر دماغ کے آپریشن میں ترقی یافتہ ممالک سے بھی سبقت لے گئے ہیں اور جنرل ہسپتال کے پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف نیورو سائنسز میں ناک کے ذریعے دماغ کے پچھلے حصے سے رسولیاں نکالی جاتی ہیں ۔

پروفیسر خالد

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...