راؤ انوار مجرم ہے تو قانون کی گرفت سے نہیں بچ سکتا، زرداری

راؤ انوار مجرم ہے تو قانون کی گرفت سے نہیں بچ سکتا، زرداری

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک ،نیوز ایجنسیاں) سابق صدر مملکت اور پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا ہے راؤ انوار اگر مجرم ہے تو قانون کی گرفت میں آئے گا، ماورائے عدالت قتل کی حمایت نہیں کرتا۔ایک خصوصی انٹرویو میں کراچی میں پولیس گردی اور ما و رائے عدالت قتل کرنیوالے پولیس آفیسر راؤ انوار سے متعلق کہا اگر وہ مجرم ہیں تو قانون کی گرفت سے انہیں کوئی نہیں بچا سکتا۔ نواز شریف سے راہیں جدا ہیں مفاہمت کا کوئی راستہ نہیں، میں ان کی وجہ سے اپنی کشتی نہیں ڈبو سکتا۔بلاول بھٹو اور آصفہ آئندہ الیکشن میں حصہ لیں گے، جبکہ آصفہ بھٹو لیاری سے الیکشن لڑنا چاہتی ہیں۔بعد ازاں اپنے ایک بیان میں انہوں نے حکومت کو متنبہ کیا کہ وہ پراسرار انداز میں عام انتخابات سے قبل پی آئی اے کی نجکاری نہ کرے۔پی آئی اے کی جلدبازی میں نجکاری اور اس سے پارلیمنٹ کو بے خبر رکھنا نہ صرف عوام کیخلاف ایک جرم ہے اور اس کی اجازت نہیں دی جاسکتی اور نہ دی جائے گی۔ آصف علی زرداری نے متوقع خریدداروں کو بھی خبردارکیا کہ وہ خود کو قومی ائرلائن خریدنے سے باز رکھیں کیونکہ یہ ان کے اپنے مفاد میں ہوگا اور اس کے مضمرات انہیں بھگتنا پڑیں گے ۔ ادھرترجمان سینیٹر فرحت اللہ بابر نے کہا ہے سابق صدر نے پاکستان پیپلزپارٹی سے تعلق رکھنے والے اراکین کو ہدایت کی کہ وہ یہ مسئلہ قومی اسمبلی و سینیٹ میں اٹھائیں ا ور اس کے پیچھے چھپے ہوئے مقاصد کو بے نقاب کریں۔ حال ہی میں پی آئی اے نے غیرمنافع بخش کاروبار کئے جس سے یہ شک و شبہ پیدا ہوا کہ کیا یہ پی آئی اے پر عائد ذمہ داریاں بڑھانے کیلئے جان بوجھ کر کیا گیا تاکہ جلد بازی میں کی جانیوالی نجکاری کا جواز پیدا کیا جا سکے۔ پاکستان پیپلزپارٹی کی گزشتہ حکومت میں عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمت تقریباً 50 ڈالر فی بیرل تھی جو 2015ء کم ہو کر 50ڈا لر فی بیرل ہوگئی۔ اس وجہ سے پی آئی اے کے پاس موقع تھا کہ وہ اپنے نقصانات کم کر لیتی لیکن ایسا نہیں ہوا ور نقصانات زیادہ بڑھ گئے۔

مزید : صفحہ اول


loading...