ڈسٹرکٹ بار کلرکس ایسوسی ایشن کی وہاڑی پولیس کیخلاف ہڑتال،احتجاج‘وکلا کا بھی اظہار یکجہتی‘کلرک شبیرکیخلاف مقدمہ درج ہے ‘پولیس

ڈسٹرکٹ بار کلرکس ایسوسی ایشن کی وہاڑی پولیس کیخلاف ہڑتال،احتجاج‘وکلا کا ...

وہاڑی(بیورو رپورٹ+نما ئندہ خصوصی) ڈسٹرکٹ بار کلرک ایسوسی ایشن کی وہاڑی پولیس کے خلاف ہڑتال اور احتجاجی مظاہرہ وکلاء نے بھی کلرکس کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے (بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

ہوئے ہڑتال کردی،ڈسٹرکٹ کلرکس ایسوسی نے پولیس تھانہ صدرکی چوکی پُل 48 کے انچارج محمد یو نس کے نا منا سب رویے کے خلاف ہڑتال کرتے ہوئے احتجاجی مظاہرہ شروع کردیا ہے۔کلرکس ایسوسی ایشن کے صدر یوسف مانی کا کہنا ہے کہ تھانہ صدر وہاڑی کے اے ایس آئی محمد یونس چوکی انچارج نے ہمارے کلرک شبیر حسین کو بغیر کسی مقدمہ کے گرفتار کرکے نامعلوم جگہ پررکھا ہوا ہے۔پولیس کلرک کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنارہی ہے جس کی وجہ سے عدالت پیش بھی نہیں کررہی ہے۔ملاقات کیلئے گئے تو ملاقات نہیں کروائی گئی اور دھکے مار کر نکال دیا گیا۔کلرکس ایسوسی ایشن کے ساتھ اظہار یکجہتی کرتے ہوئے جنرل سیکرٹری بارفاروق خان، محسن رضا گھبیسرایڈووکیٹس ودیگر وکلاء نے بھی ہڑتال کا اعلان کردیاہے اور کوئی بھی وکیل عدالت میں پیش نہیں ہورہا ہے۔ جنرل سیکرٹری بار فاروق خان کا کہنا ہے کہ کلرکس انکے دست و بازو ہیں اور وہ کلرک ایسوسی ایشن کے ساتھ کھڑے ہیں۔وکلاء نے کلرکس کے ساتھ ملکر زبردستی کچہری کے گیٹ بھی بند کردئیے ہیں۔اس حوالے سے ایس ایچ او تھانہ صدر وہاڑی محمد ادریس نے بتایا ہے کہ چند کلرکوں نے ڈسٹرکٹ بار کے سامنے احتجاج کیا جن کا مطالبہ تھا کہ کلرک شبیر ولد اللہ دتہ چک نمبر 99wbکو پولیس تھانہ صدر وہاڑی نے گرفتار کیا جس کے خلاف مقدمہ بھی درج نہ تھاکو رہا کیا جائے جبکہ ملزم شبیر چوری کی موٹر سائیکلیں بیچنے کا بھی کام کرتا ہے جس کے خلاف مقدمہ نمبر 77/18بجرم 381ت پ درج رجسٹر ہے.ملزم شبیر مقدمہ میں نامزد ہے۔جسے گرفتار کر کے تفتیش کی جارہی ہے کسی قسم کا تشدد نہیں کیا گیا کلرکوں سے مذاکرات کے بعد احتجاج ختم ہو گیاہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر