بجلی،گیس لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج سے قبل جماعت اسلامی تونسہ کا رہنما گرفتار

بجلی،گیس لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج سے قبل جماعت اسلامی تونسہ کا رہنما گرفتار

تونسہ شریف(تحصیل رپورٹر )جماعت اسلامی تونسہ نے اپنے ضلعی امیر پروفیسر عطا محمد جعفری کی قیادت میں کلمہ چوک تونسہ پر بجلی ،گیس کی طویل بندش اور انتظامیہ کے غریب دکانداروں کے ساتھ ہتک آمیر رویے کے خلاف احتجاج کیا اس سے پہلے کہ احتجاجی مظاہرہ شروع کیا جاتا سٹی پولیس نے جماعت اسلامی کے مقامی رہنما معین احمد موسیٰ خیل کو ایمپلی فائر ایکٹ کے تحت گرفتار کرلیا اس موقع (بقیہ نمبر43صفحہ12پر )

پر جماعت اسلامی کے رہنماپروفیسر عطا محمد جعفری نے کہا کہ معین احمد موسیٰ خیل ایک سیاسی ورکر ہے اسکی گرفتاری کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں جب تک اسے رہائی نہیں دی جائے گی کلمہ چوک پر دھرنا جاری رہے گا ،انہوں نے کہا کہ بجلی و گیس کی طویل بندش ایک ظالمانہ اقدام ہے کسی بھی فردواحد کی غلطی کی سزا یہاں کے لاکھوں مکینوں کو نہیں دی جاسکتی ،پروفیسر رشید اختر نے کہا کہ بجلی و گیس کی طویل بندش تونسہ کے طلبہ کے ساتھ رچائی گئی ایک سازش ہے تاکہ یہاں کے بچے روشن مستقبل کے لیے حال کی کاوشوں کو بہتر طور پر پورا نہ کرسکیں صادق کریم نے کہا کہ ایم پی اے اپوزیشن کا بہانہ بنا کر گھر نہیں بیٹھ سکتے اگر انکے دل میں عوام کا درد ہے تو انہیں کلمہ چوک پر عوام کے مسائل کے حل کے لیے آنا ہوگا وہ کام نہیں کرسکتے تو استعفیٰ دے دیں ،غنا محمد گجر،اعجاز لنگاہ،پروفیسر رشید احمد اختر،حافظ نذیر،بلوچ رہنما ذوالفقار بلوچ و دیگرنے بھی خطاب کیا۔

احتجاجی مظاہرہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...