پی ٹی آئی ،جے یو آئی (س) اتحاد ایم ایم اے ووٹ بنک پراثر نہیں پڑیگا :مولانا شجاع الملک

پی ٹی آئی ،جے یو آئی (س) اتحاد ایم ایم اے ووٹ بنک پراثر نہیں پڑیگا :مولانا شجاع ...

چارسدہ (بیورورپورٹ)جمعیت علمائے اسلام کے صوبائی جنرل سیکرٹری اور سابق ایم این اے مولانا شجاع الملک نے کہا ہے کہ تحریک انصاف اور مولاناسمیع الحق کا اتحاد ایم ایم اے کے ووٹ بینک پر اثر انداز نہیں ہو گا۔ ایم ایم اے کی بحالی کے فوراً بعد پر ویزخٹک نے دارالعلوم حقانیہ کیلئے فنڈ جاری کئے ۔ جے یو آئی فاٹا انضمام کے مخالف نہیں ۔ وہ چارسدہ جرنلسٹ کے پروگرام "ملاقات" میں اظہار خیا ل کر رہے تھے ۔ مولانا شجاع الملک نے کہا کہ وطن عزیز کے مسائل کا حل صالح قیادت کے اتحاد میں ہے ۔ موجود ہ حالات میں وطن عزیز معاشرتی اور معاشی مسائل کا شکار ہے ۔صوبائی حکومت کی طرف سے آئمہ کرام کیلئے مقرر کردہ اعزازیہ جھوٹ کا پلندہ ہے اور صوبائی حکومت این جی اوز کے فنڈ ز ہڑپ کرنے کیلئے آئمہ کرام کو بدنام کررہی ہے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ آئمہ کرام کے اعزازیہ کیلئے کوئی قانون سازی اور نہ بجٹ میں فنڈ محتص کیا گیا ہے ۔انہوں نے واضح کیا کہ علمائے کرام اسلام کی سربلندی کیلئے متحد ہے ۔ مولانا سمیع الحق اور تحریک انصاف کا اتحاد ایم ایم اے کے ووٹ بینک پر کسی صورت اثر انداز نہیں ہو گا۔ مولانا سمیع الحق کو بہت جلد غلطی کا احساس ہو جائیگااور امید ہے کہ وہ دوبارہ ایم ایم اے کا حصہ ہونگے ۔ انہوں نے کہاکہ مولانا سمیع الحق کو ایم ایم اے میں شامل کرنے کیلئے جید علمائے کرام کاوفد مولانا سمیع الحق سے رابطہ میں ہے اور بہت جلد اس کے مثبت نتائج برآمد ہونگے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری خواہش ہے کہ مولانا سمیع الحق سینٹر منتخب ہو جائے ۔ وزیر اعلی پر ویزخٹک آئندہ عام انتخابات میں مذہبی ووٹ حاصل کرنے کیلئے مولانا سمیع الحق کو استعمال کر رہے ہیں ۔دار العلوم حقانیہ کیلئے وزیر اعلی نے کافی عرصہ پہلے کروڑوں روپے فنڈ کا اعلان کیا تھا مگر جونہی ایم ایم اے بحال ہوئی تو وزیر اعلی نے فوری طور پر پہلی قسط جاری کی ۔ انہوں نے کہاکہ صوبائی بجٹ کا بیشترحصہ سیاسی سکورننگ کیلئے مردان ، نوشہرہ اور صوابی میں استعمال ہو رہا ہے ۔انہوں نے کہاکہ جے یو آئی اور جماعت اسلامی میں فاٹا انضمام کے حوالے سے کوئی بڑا اختلاف نہیں ۔جے یو آئی فاٹا کو قومی دارے میں شامل کرنے کے بعد خیبر پختونخوا کا حصہ بنانا چاہتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ تحریک انصاف حکومت کے اربوں روپے کرپشن بہت جلد بے نقاب ہو گی ۔ جہانگیر ترین نے ہزاروں جریب سرکاری زمین غیر قانونی طور پر اپنے نام منتقل کیا ہے ۔ لودھراں الیکشن کے بعد عمران خان کی سیاست سونامی میں ڈوب چکی ہے ۔انہوں نے کہاکہ تبدیلی کے دعویداروں نے پورے صوبے کے عوام کو اربوں روپے کا مقروض کر دیا ہے ۔ آئندہ عام انتخابات میں ایم ایم اے بھاری اکثریت سے کامیاب ہو کر صوبے میں حکومت بنائیگی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر /کراچی صفحہ اول


loading...