کراچی ،تحریک نفاذ اردوکی شعیب صادق کے اعزاز میں تقریب

کراچی ،تحریک نفاذ اردوکی شعیب صادق کے اعزاز میں تقریب

کراچی(اسٹاف رپورٹر) تحریک نفاذ اردو و صوبائی زبان کی طرف سے کینیڈا میں مقیم معروف پاکستانی صحافی اور افسانہ و ناول نگار شعیب صادق کے ساتھ ایک شام تکریم و پذیرائی منعقد کی گئی۔ جس کی صدارت متحدہ عرب امارات میں پاکستان کے سابق سفیر جمیل احسد خان نے فرمائی جبکہ مہمان خصوصی کراچی پریس کلب کے صدر احمد ملک تھے۔ اس موقع پر استقبالیہ کلمات ادا کرتے ہوئے تحریک کے صدر سید نسیم شاہ ایڈوکیٹ نے کہا کہ تحریک گذشتہ ایک عشرے سے زیادہ عرصے سے قائد اعظم کے اعلان اور دستور پاکستان کے فرمان کے بموجب اس ملک میں نفاذ اردو کے لئے کوشاں ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ تحریک کے تحت اکابرین زبان وا دب کے اعزاز میں تکریمی و تہذیبی نشستیں بھی منعقد کی جاتی رہتی ہیں۔ اور آج کی یہ تقریب بھی اسی سلسلے کی ایک کڑی ہے۔ نظامت کارقندیل جعفری نے اپنے خطاب میں شیعب صادق اور جمیل احمد خان کی زبان و ادب کے سلسلے میں ان کی کوششوں کا اجمالی جائزہ لیا۔ اور ان کی خدمات کو زبردست خراج تحسین پیش کیا۔ مہمان اعزازی ڈاکٹر عالیہ امام نے اردو کے نفاذ کے حوالے سے ارباب اختیار و اقتدار کی کوتاہ اندیشیوں پر اپنے دکھ اور افسوس کا اظہار بھی کیا۔ انہوں نے دیار غیر میں مقیم پاکستان کی ادبی وتعلیمی شخصیات خصوصا" شعیب صادق اور جمیل احمد خان کی خدمات کو سراہا۔ مہمان خصوصی کراچی پریس کلب کے صدر احمد ملک نے بھی اردو کی اہمیت وافادیت اْجاگر کرتے ہوئے اْسے اْس کا صحیح اور جائز مقام دینے کا مطالبہ بھی کیا۔ تقریب کے صاحب اعزاز شعیب صادق نے اپنے مشاہدات و تحربات سے حاضرین کو آگاہ کیا۔اور اپنی تحریروں کے حوالے سے پْرمزاح گفتگو بھی کی۔ آخر میں صاحب صدر جمیل احمد خان نے سول سروس اور سفارت کاری کے حوالے سے نہایت معلوماتی، فکرانگیز اوربسیط گفتگو کی ، اردو کے ایک بڑے مداح ہونے کی حیشیت سے انہوں نیفرمایا کہ اردو رابطہ کی زبان ہے اورجتنی جلد اس ملک میں اردو کا نفاذ عمل میں آئے اْتنا ہی بہتر ہے۔ تقریب سے رحمان نشاط، نسیم انجم نجیب عمر، محمد نوید شاد آرائیں ، عادل ابراہیم، شگفتہ شفیق، اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ آخیر میں تحریک کے صدر نسیم شاہ ایڈوکیٹ کی طرف سے مہمانوں کی خدمات کے حوالے سے انہیں یادگاری شیلڈز بھی پیش کیں

مزید : پشاورصفحہ آخر /راولپنڈی صفحہ آخر /کراچی صفحہ اول