کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج صحتیاب ہونے والے مریضوں کے خون سے کیا جائے گا

کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج صحتیاب ہونے والے مریضوں کے خون سے کیا جائے گا
کرونا وائرس کے مریضوں کا علاج صحتیاب ہونے والے مریضوں کے خون سے کیا جائے گا

  



بیجنگ (ڈیلی پاکستان آن لائن) چینی وزارت صحت کے حکام نے کرونا وائرس کے ان مریضوں سے جو صحتیاب ہوچکے ہیں ، درخواست ہے کہ وہ خون عطیہ کریں تاکہ اس میں سے پلازما نکال کر اس کے ذریعے متاثرہ مریضوں کا علاج کیا جاسکے۔

چین کے نیشنل ہیلتھ کمیشن نے پیر کو کی جانے والی پریس بریفنگ کے دوران صحتیاب ہونے والے مریضوں سے خون کے عطیات کی اپیل کی۔ حکام نے بتایا کہ کرونا کے صحتیاب ہونے والے مریضوں کے پلازما میں اینٹی باڈی موجود ہیںجن کے ذریعے مریض صحتیاب ہوسکتے ہیں۔

نیشنل ہیلتھ کمیشن کے حکام نے بتایا کہ ووہان میں ایک نازک حالت کے مریض کو پلازما لگایا گیا تو وہ صحتیاب ہوگیا ، ایک اور مریض کو پلازما لگا تو وہ بستر سے اٹھ کر چلنے پھرنے کے قابل ہوگیا ہے، پلازما کو ان مریضوں کیلئے استعمال کیا جائے گا جن کی حالت تشویشناک حد تک بگڑ چکی ہے۔

چین کی ایک دوا ساز کمپنی چائنہ نیشنل بائیوٹیک گروپ کارپوریشن کے حکام کا کہنا ہے کہ تشویشناک حالت والے جن مریضوں کو صحتیاب ہونے والے مریضوں کا پلازما لگایا گیا ان کی حالت صرف 24 گھنٹے کے مختصر عرصے میں ہی بہتر ہوگئی۔

حکام نے صحتیاب مریضوں پر یہ بھی واضح کیا ہے کہ ان کے خون سے صرف پلازما ہی لیا جائے گا، ان کے سرخ خلیے اور پلیٹ لیٹس یا تو ڈونر کو واپس لگادیے جائیں گے یا نکالے ہی نہیں جائیں گے۔

مزید : بین الاقوامی