پاکستانی طلبا ہسپتال سے ڈسچارج، چینی حکام نے پاکستانی سفارتخانہ سے خصوصی ٹاسک فورس کو ووہان جانے کی اجازت دیدی

پاکستانی طلبا ہسپتال سے ڈسچارج، چینی حکام نے پاکستانی سفارتخانہ سے خصوصی ...
پاکستانی طلبا ہسپتال سے ڈسچارج، چینی حکام نے پاکستانی سفارتخانہ سے خصوصی ٹاسک فورس کو ووہان جانے کی اجازت دیدی

  



بیجنگ (آئی این پی) چینی حکام نے پاکستان سفارتخانہ سے خصوصی ٹاسک فورس کو ووہان جانے کی اجازت دیدی، ٹاسک فورس ووہان کا لاک ڈاون مکمل طور پر ختم اور صورتحال مکمل طور پر مستحکم ہونے تک وہاں رہے گی ۔ تفصیلات کے مطابق

پاکستان کی خصوصی درخواست پر، چینی حکام نے بیجنگ میں پاکستان سفارتخانہ سے ایک دو ممبروں کی خصوصی ٹاسک فورس کو ووہان شہر جانے کی اجازت دی تاکہ وہ مختلف یونیورسٹیوں میں پاکستانی طلبا سے مل سکیں اور ان کی خیریت اور حفاظت سے متعلق معلومات حاصل کریں۔ٹاسک فورس نے کہا ہے کہ یونیورسٹیوں میں جتنے بھی طلبا موجو د ہیں وہ مکمل طور پر محفوظ ، صحت مند ہیں اور انکی اچھی طرح سے دیکھ بھال کی جارہی ہے۔ ٹاسک فورس مستقل طور پر ووہان میں موجود ہے اور چینی حکام کے ساتھ تعاون کر رہی ہے۔ یہ ٹاسک فورس اسوقت تک ووہان میں رہے گی جب تک ووہان کا لاک ڈاون مکمل طور پر ختم نہیں ہوجاتا ہے اور صورتحال مکمل طور پر مستحکم نہیں ہو جاتی۔ ٹاسک فورس نے چار یونیورسٹیوں کا دورہ کیا جہاں پاکستانی طلبا زیر تعلیم ہیں۔

انہوں نے ہر یونیورسٹی کے انتظامی عملے سے بھی ملاقات کی اور طلبا کے لئے کئے جانیوالے حفاظتی اقدامات کا جائزہ لیا۔ وہ تین دیگر یونیورسٹیوں کا دورہ کریں گے اور یونیورسٹیوں میں زیر تعلیم طلبا اور انتظامی عملے سے ملاقات کریں گے۔ کرونا وائرس کے انفیکشن کی وجہ سے صوبہ ہوبے کے لاک ڈا ون کے پہلے دن سے ہی ، پاکستانی سفارتخانہ صوبہ ہوبے اور چین میں موجود پاکستانی طلبا کو ہر ممکن سہولیات فراہم کرنے کے لئے فعال کردار ادا کر رہا ہے۔دوسری طرف ووہان میں کورونا وائرس سے متاثرہ 4 پاکستانی طلبا کا علاج کیا گیا اور اب انہیں مکمل صحت یابی کے بعد اسپتال سے فارغ کردیا گیا ہے۔سفارت خانے کے افسران نے ووہان میں پاکستانی طلبا کے ساتھ گفتگو کر تے ہوئے بتایا ہے کہ طلبہ صحت مند ہیں اور انکی اچھی طرح دیکھ بھال کر رہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی /تارکین پاکستان