کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے 80 سالہ چینی خاتون اپنی ساری پنشن عطیہ کرنے کیلئے پہنچ گئی ، پھر کیا ہوا؟ دیکھ کر آپ بھی جذبے کو داد دیں گے

کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے 80 سالہ چینی خاتون اپنی ساری پنشن عطیہ کرنے کیلئے ...
کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے 80 سالہ چینی خاتون اپنی ساری پنشن عطیہ کرنے کیلئے پہنچ گئی ، پھر کیا ہوا؟ دیکھ کر آپ بھی جذبے کو داد دیں گے

  



ووہان (ڈیلی پاکستان آن لائن) چین میں اس وقت کرونا وائرس نے لوگوں کی زندگیاں نگلنے کا سلسلہ شروع کیا ہوا ہے اور اب تک 1700 سے زائد قیمتی انسانی جانیں کھا چکا ہے، اس موذی وائرس سے نمٹنے کیلئے جہاں حکومتی سطح پر کوششیں کی جارہی ہیں وہیں شہریوں کا جذبہ بھی قابل دید ہے، ناقابل شکست جذبے کی ایک کہانی چین کی سرکاری ایجنسی چائنہ ژن ہوا ایجنسی نے ایک ویڈیو کی شکل میں شیئر کی ہے۔

ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ایک 80 سالہ خاتون اپنی زندگی کی ساری جمع پونجی اور پنشن کے بونڈز لے کر پولیس اہلکاروں کے پاس پہنچ جاتی ہے، بزرگ خاتون کی جمع پونجی 50 ہزار یو آن تھی جو اس نے کرونا وائرس سے لڑنے کیلئے پولیس اہلکاروں کو تھمادی۔

پولیس اہلکاروں نے خاتون کے بارے میں معلومات لیں تو پتا چلا کہ وہ اکیلی رہتی ہے اورشوہر کی موت کے بعد اس کا واحد سہارا یہ پنشن ہی ہے۔ پولیس اہلکاروں نے عقلمندی کا مظاہرہ کرتے ہوئے معمر خاتون سے پیسے لینے سے انکار کردیا۔ سوشل میڈیا پر ویڈیو سامنے آنے کے بعد 80 سالہ گﺅ شویونگ پورے چین میں ایک ہیرو کی حیثیت اختیار کرگئی ہیں اور لوگ ان کی بھرپور تحسین کر رہی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی