”پاکستان اور بھارت دو طرفہ کرکٹ سیریز کیوں نہیں کھیل سکتے؟“ شعیب اختر نے ایسے دلائل پیش کر دئیے کہ مودی سرکار بھی شرمندہ ہو جائے

”پاکستان اور بھارت دو طرفہ کرکٹ سیریز کیوں نہیں کھیل سکتے؟“ شعیب اختر نے ...
”پاکستان اور بھارت دو طرفہ کرکٹ سیریز کیوں نہیں کھیل سکتے؟“ شعیب اختر نے ایسے دلائل پیش کر دئیے کہ مودی سرکار بھی شرمندہ ہو جائے

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے کہا ہے کہ پاکستان اوربھارت ایک دوسرے کیساتھ ڈیوس کپ اور کبڈی کھیل سکتے ہیں تو پھر کرکٹ کیوں نہیں کھیل سکتے؟ ہم ایک دوسرے کے آلو اور پیاز کھاتے ہیں تو پھر کرکٹ میچ کیوں نہیں کھیل سکتے۔

تفصیلات کے مطابق شعیب اختر نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ ”جب ہم ایک دوسرے کے ساتھ ڈیوس کپ کھیل سکتے ہیں، کبڈی کھیل سکتے ہیں تو پھر کرکٹ کیوں نہیں کھیل سکتے ہیں؟ جب بھی کرکٹ کی بات آتی ہے تو ہم اسے سیاست سے جوڑنے لگتے ہیں جو انتہائی افسوسناک بات ہے۔ ہم ایک دوسرے کے آلو اور پیاز کھاتے ہیں تو پھر کیوں ہم ایک دوسرے کے ساتھ کرکٹ میچ نہیں کھیل سکتے۔ اگر آپ آپس میں تعلقات ختم کرنا چاہتے ہیں تو صرف کرکٹ نہ کھیل کر ہی کیوں ختم کر رہے ہیں؟ آپس میں تجارت ختم کریں، کبڈی کھیلنا بھی بند کریں۔“

راولپنڈی ایکسپریس کا کہنا تھا کہ ہم پاکستان اور بھارت کے درمیان نیوٹرل مقام پر سیریز کا انعقاد کر سکتے ہیں۔ میں سمجھ سکتا ہوں کہ بھارت کے لوگ پاکستان نہیں آ سکتے اور پاکستان کے لوگ بھارت نہیں جا سکتے مگر ہم غیر نیوٹرل مقامات پر ایشاءکپ اور چیمپیئن ٹرافی بھی تو کھیلتے ہیں تو پھر انہی مقامات پر دوطرفہ سیریز کیوں نہیں کھیل سکتے؟ ہم دنیا کے بہترین مہمان نواز قوموں میں شمار ہوتے ہیں جسے بھارت بھی دیکھ چکا ہے۔

شعیب اختر نے کہا کہ وریندر سہواگ، سارو گنگولی اور سچن ٹنڈولکر سے پوچھیں ہم انہیں کتنا پسند کرتے ہیں، دونوں ملکوں کے درمیان موجود اختلافات کو کرکٹ پر اثرانداز نہیں ہونا چاہیے اور امید کرتا ہوں کہ جلد ہی دونوں ممالک کے درمیان دو طرفہ کرکٹ سیریز کا انعقاد ہوگا جو کہ دونوں ٹیموں کیلئے ضروری ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان ایک محفوظ جگہ ہے، حال ہی میں یہاں بھارت کی کبڈی کی ٹیم آئی اور بنگلہ دیش کی ٹیم کرکٹ کھیلنے آئی اور ان ٹیموں کو پاکستان میں بہت پیار ملا لیکن اس کے باوجو آپ لوگوں کو کسی بھی قسم کا شبہ ہے تو ہم اس کا انعقاد کسی اور ملک یا جگہ پر کرسکتے ہیں۔

مزید : کھیل