بھارت جانیوالی سیما حیدر کیلئے نئی مشکل، پاکستانی شوہر بھی میدان میں، ابتدائی کامیابی مل گئی

بھارت جانیوالی سیما حیدر کیلئے نئی مشکل، پاکستانی شوہر بھی میدان میں، ...
بھارت جانیوالی سیما حیدر کیلئے نئی مشکل، پاکستانی شوہر بھی میدان میں، ابتدائی کامیابی مل گئی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (ویب ڈیسک) آن لائن گیم سے بھارتی شہری سے دوستی اور محبت ہونے کے بعد 4 بچوں کے ہمراہ بھارت جانے والی پاکستانی خاتون سیما حیدر کے پہلے شوہر نے اپنے بچوں کی حوالگی کے لیے بھارت میں وکیل کی خدمات حاصل کرلیں۔

غلام حیدرنے بھارت میں وکیل علی مومن کی خدمات انصار برنی ایڈووکیٹ کےتوسط سے حاصل کی ہیں۔ انصاربرنی ایڈووکیٹ نے غلام حیدرکا پاورآف اٹارنی، وکالت نامہ بھارت ارسال کردیا۔ سیما کے پہلے شوہر غلام حیدربھارتی عدالت میں بچوں کی پاکستان واپسی کیلئے مقدمہ دائر کریں گے۔
رپورٹس کے مطابق انصار برنی ایڈووکیٹ نے تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ یہ صرف ایک خاتون کا بچوں کے ساتھ بھارت منتقلی کا معاملہ نہیں بلکہ اس کے پیچھے ایک مکمل سوچی سمجھی پلاننگ ہے جس میں دہشت گردی کا عنصر بھی نظر انداز نہیں کیا جاسکتا۔بین الاقوامی قوانین کے تحت بچوں کو ان کا مذہب تبدیل نہیں کرایا جا سکتا، ہم اس کے خلاف بھارتی عدالت سے بھی رجوع کریں گے، غلام حیدر کے بچے کم عمر ہیں اور اب بھی پاکستان کے شہری ہیں، والد کا ان پر پورا حق ہے۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ غلام حیدر کا اپنی بیوی سے کوئی لینا دینا نہیں وہ صرف اپنے بچوں کو پاکستان واپس لانا چاہتے ہیں۔

دوسری جانب سیما کے پہلے شوہرغلام حیدر کا کہنا تھا کہ مجھے اس بات سے کوئی دلچسپی نہیں کہ سیما اپنا مذہب کی تبدیلی کے حوالے سے کیا کررہی ہیں لیکن میرے بچے معصوم ہیں اور ان کا مذہب تبدیل نہیں کروایا جاسکتا ہے۔‘غلام حیدر کی جانب سے بھارتی وکیل کی خدمات حاصل کرنے سے متعلق جب بھارت میں سیما اور سچن کے وکیل اے پی سنگھ سے سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ ہمیں ایسی کسی پیش رفت کے بارے میں علم نہیں ہے،  جب ہمیں سرکاری طور پر اس کا علم ہوگا، تو ہم اس کے مطابق جواب دیں گے۔

یاد رہے کہ غلام حیدر کے سیما سے 4 بچے ہیں جن میں سب سے بڑے کی عمرتقریباً 9 سال ہے۔ سیما کی پاکستان سے بھارت روانگی کے وقت غلام حیدر سعودی عرب میں مقیم تھے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -