بنگلہ دیش بھارتی ایما پر سہ فریقی معاہدہ سبوتاژ کر رہا ہے ،لیاقت بلوچ

بنگلہ دیش بھارتی ایما پر سہ فریقی معاہدہ سبوتاژ کر رہا ہے ،لیاقت بلوچ

  

لاہور(نمائندہ خصوصی) سیکرٹری جنرل جماعت اسلامی پاکستان لیاقت بلوچ نے کہا کہ ہم وزیراعظم اورچیف آف آرمی سٹاف کے سعودی عرب، ایران کے دورے کا خیرمقدم کرتے ہیں لیکن انہیں بنگلہ دیش پر سہ فریقی معاہدے کیوں نظر نہیں آئے وہ جرأت کا مظاہرہ کریں ، ڈھاکہ جائیں اور شیخ حسینہ واجد سے نام نہاد جنگی جرائم کے ٹریبونلزکے ذریعے جماعت اسلامی بنگلہ دیش اور دیگر سیاسی جماعتوں کے قائدین کو سزائے موت دینے پر احتجاج اور بات چیت کریں ۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے مسجد شہدا کے باہر جماعت اسلامی حلقہ خواتین کے زیراہتمام بنگلہ دیشی حکومت کے ظالمانہ اقدام اور جماعت اسلامی کے رہنماؤں کو پھانسی دینے کے خلاف بڑے احتجاجی مظاہرے سے خطا ب کرتے ہوئے کیا ۔امیر جماعت اسلامی لاہور ڈاکٹر ذکر اللہ مجاہد ، ضیاء الدین انصاری ایڈووکیٹ ، نواب الدین چوہدری ، عبدالعزیزعابد ، جماعت اسلامی حلقہ خواتین کی سیکرٹری جنرل عافیہ سرور ، زبیدہ جبیں اور درافشاں بھی موجود تھیں ۔مظاہرے میں چھوٹے بچے اور بچیوں کی کی کثیر تعداد نے شرکت کی ۔انہوں نے کہاکہ اگر بنگلہ دیشی حکومت سے سہ فریقی معاہدے پر بات چیت نہ کی گئی اور بھارت کو کھلی چھٹی دی گئی تو یہ بات آگے جا کر پاکستان کی فوج ، جرنیلوں اور سول بیوروکریسی تک پہنچے گی عالم اسلام بھی بے حسی ترک کرے اور شیخ حسینہ واجد حکومت کے ظالمانہ اقدامات کے خلاف آواز بلند کرے ۔

لیاقت بلوچ

مزید :

صفحہ آخر -